پاکستان:باکسنگ میں دو تمغے یقینی

ہارون خان
Image caption ہارون خان پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کے بھائی ہیں

سنہ 2010 کے دولتِ مشترکہ کھیلوں میں دو پاکستانی باکسرز کے سیمی فائنل مقابلے تک رسائی کی بدولت پاکستان کو کم از کم دو کانسی کے تمغے یقینی طور پر ملیں گے۔

سنیچر کو پاکستان کے لیے باکسنگ میں دو میڈل اس وقت یقینی ہوگئے جب پاکستانی باکسر محمد وسیم اور ہارون خان نے کوارٹر فائنل مقابلوں میں اپنے مدِ مقابل کو شکست دے کر سیمی فائنل میں جگہ بنا لی۔

باکسنگ میں سیمی فائنل مرحلے تک پہنچنے والے چاروں باکسرز میں سے جہاں دو سونے اور چاندی کے تمغوں کے لیے مقابلہ کرتے ہیں وہیں سیمی فائنل میں شکست کھانے والے دونوں باکسرز کو کانسی کا تمغہ دیا جاتا ہے۔

ہارون خان کی بی بی سی اردو سے بات چیت

محمد وسیم نے لائٹ فلائی ویٹ مقابلوں کے کوارٹر فائنل میں گھانا کے ڈیوک میچا کے خلاف دو کے مقابلے میں چار پوائنٹس سے فتح حاصل کی جبکہ ہارون خان نے فلائی ویٹ مقابلوں میں ویلز کے ایڈریو سیلبی کو بہتر کارکردگی کی بنیاد پر شکست دی۔

ہارون اور سیلبی نے مقابلے کے اختتام تک تین تین پوائنٹس حاصل کیے جس پر ججوں نے بہتر کھیل دکھانے پر ہارون خان کو فاتح قرار دیا۔

ہارون خان اولمپکس میں برطانیہ کے لیے نقرئی تمغہ جیتنے والے پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کے بھائی ہیں اور انہوں نے انگلش باکسنگ ٹیم میں شامل نہ کیے جانے کے بعد پاکستان کی جانب سے مقابلوں میں حصہ لینے کا فیصلہ کیا تھا۔

خیال رہے کہ باکسنگ میں ایک اور پاکستانی باکسر نثار خان بھی کوارٹر فائنل مقابلوں تک رسائی حاصل کر چکے ہیں۔

اسی بارے میں