کھلاڑیوں نے توڑ پھوڑ نہیں کی:آسٹریلیا

فائل فوٹو
Image caption آسٹریلیائی کھلاڑیوں نے اس بار سب سے زیادہ تمغے حاصل کیے ہیں

آسٹریلیا نے ان الزامات کی سختی سے تردید کی ہے کہ اس کے کھلاڑیوں نے دلی کے کھیل گاؤں میں اپنے ٹاور کے اندر توڑ پھوڑ جیسی کوئی حرکت کی ہے۔

بھارت میں ذرائع ابلاغ نے الزام عائد کیا ہے کہ جس روز آسٹریلوی کرکٹ ٹیم بھارت سے دوسرا ٹیسٹ میچ ہاری تھی اس دن کھلاڑی غصہ میں تھے اور اسی لیے انہوں نے ہنگامہ آرائی کی تھی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق کھلاڑیوں نے فرنیچراور بجلی کا سامان توڑا اور واشنگ مشین کو نیچے پھینک دیا تھا۔

تاہم دلی میں آسٹریلیا کے سفارت خانے کی طرف جاری ایک بیان اس کی سخت الفاظ میں تردید کی گئی ہے اور کہا گیا ہے کہ کھلاڑی اپنی جیت پر خوشی منارہے تھے جس کے جشن کے دوران ایک واشنگ مشین ٹوٹ گئی تھی۔

یہ خبر اخبار ٹائمز آ‌ف انڈیا نے شا‏ئع کی تھی جسے جمعہ کے روز کئی بھارتی ٹی وی چیلنز نے بھی نشر کیا ہے۔ اس اخبار کے مطابق آ‎سٹریلیائی کھلاڑیوں نے سچن تندولکر کے خلاف بھی نعرے بازی کی جنہوں نے میچ جتانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔

آ‎سٹریلیا کی طرف سے جاری ایک بیان میں اس خبر کو حد درجہ گری ہوئی صحافت سے تعبیر کیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ یہ من گھڑت خبر ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس جشن میں کئی دیگر ملکوں کے کھلاڑی بھی شامل تھے اس لیے اس بات کا کسی کو علم نہیں کہ آخر مشین کس سے ٹوٹی تھی۔

بیان میں اس بات کی سختی سے تردید کی گئی ہے کہ کھلاڑی کرکٹ میں اپنی شکست کے خلاف احتجاج کر رہے تھے۔ ’یہ کہنا ہے کہ یہ دوسرے ٹیسٹ میچ میں آ‎سٹریلیا کی ہار کے خلاف رد عمل تھا پوری طرح سے بے بنیاد ہے۔ آ‎سٹریلیائی ٹیم کی خوشی کی تقریب کا کرکٹ کی سے ہار کا کوئی لینا دینا نہیں ہے‘۔

دلی میں پولیس نے بھی اس طرح کے کسی بھی واقعے کی اطلاع ہونے سے انکار کیا ہے اور کامن ویلتھ کھلیوں سے متعلق بعض اہل کاروں نے بھی اس حوالے سے پوچھے گئے سوالات کے جواب میں ایسی کوئی بات نہیں کہی ہے۔

اسی بارے میں