کوچی کے مالکان کو تیس دن کی مہلت

Image caption آئی پی ایل کا چوتھا ایڈیشن 2011 میں منعقد ہوگا

بھارتی کرکٹ کنٹرول بورڈ نے انڈین پریمیئر لیگ میں شامل کوچی کی ٹیم کو اپنے معاملات درست کرنے کے لیے تیس دن کی مہلت دی ہے۔

اس عرصے میں اگر کوچی کی ٹیم کے مالکان نے ملکیت کے حوالے سے جاری تنازعہ حل نہ کیا تو ان کی ٹیم بھی راجستھان رائلز اور کنگز الیون پنجاب کی طرح انڈین پریمیر لیگ سے نکال دی جائے گی۔

کوچی کی ٹیم کو ایک ماہ کی مہلت دینے کا اعلان بی سی سی آئی کے صدر ششانک منوہر نے کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ’ہم نے کوچی کو ان کے مسائل حل کرنے کے لیے تیس دن کی مہلت دی ہے‘۔

کوچی ٹیم کے مالک ستیہ جیت گائیکواڈ نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ یہ مہلت ملنے پر ’بہت شکرگزار ہیں‘ ۔ بی بی سی ہندی سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ وہ مسئلے کے حل کے لیے کام کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ’ہماری مشکلات کے باوجود ہمیں مہلت مل گئی ہے۔ اب یہ ہمارا کام ہے کہ ہم اپنا تنازعہ حل کریں اور بورڈ کے پاس واپس جائیں۔ ہمیں یقین ہے کہ ہم اپنے مسائل پر قابو پانے میں کامیاب رہیں گے‘۔

کوچی ٹیم کی فرنچائز کو رواں برس مارچ میں ہونے والی نیلامی میں راندےوو سپورٹس ورلڈ نامی کمپنی نے تین سو تینتیس ملین ڈالر کے عوض حاصل کیا تھا۔ تاہم کچھ عرصے بعد ہی اس فرنچائز کے دیگر شراکت داروں نے راندے وو سپورٹس کے شیئر کے حوالے سے اعتراضات اٹھائے تھے

اسی بارے میں