دورۂ نیوزی لینڈ کے لیے کرکٹ ٹیم کا اعلان

شعیب ملک
Image caption شعیب ملک کو ٹیم میں شامل نہیں کیا گیا

نیوزی لینڈ کے دورے میں ٹیسٹ اور ٹی ٹوئنٹی میچز کے لیے پاکستانی کرکٹ ٹیم کا اعلان کر دیا گیا ہے۔

ون ڈے سیریز کے لیے ٹیم کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

مصباح الحق کو ٹیسٹ سیریز جبکہ شاہد آفریدی کو ٹی ٹوئنٹی سیریز کے لیے کپتان برقرار رکھا گیا ہے۔

بی بی سی کے نامہ نگار عبدالرشید شکور کے مطابق شعیب ملک کامران اکمل اور دانش کنیریا ٹیم میں جگہ بنانے میں کامیاب نہیں ہوسکے ہیں جس سے ان قیاس آرائیوں کو تقویت پہنچی ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ ایسے کرکٹرز کو انٹرنیشنل کرکٹ کھلانے کے لیے تیار نہیں جو آئی سی سی کے لیے قابل قبول نہیں۔

شعیب ملک اور کامران اکمل اس ڈومیسٹک سیزن میں غیرمعمولی کارکردگی کا مظاہرہ کر رہے ہیں اور اگرمعاملہ صرف پرفارمنس کی بنیاد پر ٹیم میں منتخب کیے جانے کا ہوتا تو یہ دونوں ٹیم میں واپسی کے مضبوط دعویدار تھے۔

شعیب ملک نے قائداعظم ٹرافی میں تین سنچریوں اور ایک نصف سنچری کی مدد سے پانچ سو باسٹھ رنز بنا رکھے ہیں جبکہ کامران اکمل بھی پانچ سو تیس رنز دو سنچریوں اور دو نصف سنچریوں کی مدد سے اچھا سکور کر چکے ہیں۔

محمد یوسف بھی ٹیم میں جگہ نہیں بنا سکے ہیں وہ ان فٹ ہونے کے سبب جنوبی افریقہ کے خلاف ٹیسٹ سیریز کھیلے بغیر وطن واپس آگئے تھے البتہ فٹ ہونے کے بعد سہیل تنویر دونوں سکواڈ کا حصہ بن گئے ہیں۔

وہاب ریاض بھی دونوں ٹیموں میں شامل ہیں لیکن ٹی ٹوئنٹی ٹیم میں ان کی شمولیت فٹنس سے مشروط ہے۔

ٹیسٹ ٹیم ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہے: مصباح الحق ( کپتان )، محمد حفیظ، توفیق عمر، اظہرعلی، اسد شفیق، یونس خان، عمراکمل، عدنان اکمل، عبدالرحمن، سعیداجمل، عمرگل، تنویراحمد، وہاب ریاض اور سہیل تنویر۔

ٹی ٹوئنٹی ٹیم میں یہ کھلاڑی شامل ہیں: شاہد آفریدی ( کپتان )، محمد حفیظ، احمد شہزاد، یونس خان، عمراکمل، فواد عالم، عدنان اکمل، سعید اجمل، عبدالرحمن، عبدالرزاق، عمرگل، شعیب اختر، تنویراحمد، سہیل تنویر اور وہاب ریاض۔

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان تین ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل چھبیس اٹھائیس اور تیس دسمبر کو آکلینڈ ہملٹن اور کرائسٹ چرچ میں کھیلے جائیں گے۔

پہلا ٹیسٹ میچ سات سے گیارہ جنوری تک ہملٹن میں جبکہ دوسرا ٹیسٹ پندرہ سے انیس جنوری تک ویلنگٹن میں کھیلاجائے گا۔

چھ ون ڈے انٹرنیشنل میچوں کی سیریز بائیس جنوری سے شروع ہوگی۔

اسی بارے میں