ٹیم کو شعیب، کامران کی ضرورت ہے: آفریدی

شاہد آفریدی
Image caption ورلڈ کپ کی تیاری سے مکمل طور پر مطمئن نہیں: شاہد آفریدی

ون ڈے اور ٹوئنٹی ٹوئنٹی کپتان شاہد آفریدی پاکستانی ٹیم میں شعیب ملک اور کامران اکمل کو دیکھنا چاہتے ہیں اور انہوں نے میڈیا سے کہا ہے کہ وہ کرکٹ بورڈ اور سلیکٹرز سے ان دونوں کو ٹیم سے باہر رکھنے کی وجہ معلوم کرے۔

نامہ نگار عبدالرشید شکور کے مطابق شعیب ملک کی حمایت میں شاہد آفریدی کا تازہ ترین بیان اس لیے بھی حیران کن ہے کہ ماضی میں انہیں مبینہ طور پر شعیب ملک کی سرد مہری کی شکایت رہی تھی جب وہ کپتان تھے۔

شاہد آفریدی نے ورلڈ کپ کی تیاری پر بھی عدم اطمینان ظاہر کیا ہے۔

کراچی کے ایک سکول کی تقریب کے موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے شاہد آفریدی نے کہا کہ شعیب ملک اور کامران اکمل ٹیم کی ضرورت ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شعیب ملک ہمیشہ سے اچھا رہا ہے اور دو تین دوروں میں اسے ٹیم سے دور کرنے کا مطلب یہ نہیں کہ اسے ہمیشہ کے لیے ٹیم سے ہٹا دیا گیا۔’اس کا مقصد ان کی بہتری تھی کیونکہ جب کھلاڑی ٹیم سے باہر ہوتا ہے تو اسے اپنی خامیوں کے بار ے میں بہت کچھ سوچنے کا موقع ملتا ہے اور غلطیوں کا بھی احساس ہوتا ہے۔‘

آفریدی نے کہا کہ شعیب ملک نے ڈومیسٹک کرکٹ میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے اسی طرح کامران اکمل نے بھی فرسٹ کلاس میچوں میں عمدہ پرفارمنس دی ہے۔ان دونوں کو کن وجوہات کے تحت ٹیم میں شامل نہیں کیا گیا ہے اس بارے میں بورڈ بہتر بتا سکتا ہے۔

شاہد آفریدی نے کہا کہ ورلڈ کپ اب نزدیک آچکا ہے اور وہ اس سلسلے میں ہونے والی تیاری سے مکمل طور پر مطمئن نہیں ہیں کیونکہ جلد سے جلد ٹیم بناکر ان کے حوالے کر دی جائے تاکہ کھلاڑیوں کے ساتھ کام ہو اور ان پر محنت کی جا سکے۔

شاہد آفریدی نے کہا کہ اس ٹیم سے ورلڈ کپ میں لوگوں کی توقعات زیادہ نہیں ہیں لیکن بحیثیت کپتان وہ اسے متحرک رکھنے کی کوشش کریں گے اور دستیاب کھلاڑیوں سے ہی کام لیں گے۔

شاہد آفریدی نے کہا کہ ٹیسٹ کرکٹ سے ان کا کوئی تعلق نہیں لیکن جہاں تک ٹی ٹوئنٹی کا تعلق ہے وہ سمجھتے ہیں کہ محمد یوسف کی اس میں جگہ نہیں بنتی۔

اسی بارے میں