بیٹنگ کنسلٹنٹ میانداد ٹیم کے ساتھ نہیں جائیں گے

Image caption پاکستانی ٹیم نیوزی لینڈ کے دورے میں تین ٹی ٹوئنٹی چھ ون ڈے اور دو ٹیسٹ میچز کھیلے گی

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور کوچ جاوید میانداد کا کہنا ہے کہ کھلاڑیوں نے جو کچھ بھی سیکھنا ہوتا ہے وہ کیمپ میں ہوتا ہے دورے پر نہیں کیونکہ دورے میں آپ کو پرفارمنس دینی ہوتی ہے۔

جاوید میانداد ان دنوں نیوزی لینڈ کے دورے پر جانے والی پاکستانی ٹیم کے تربیتی کیمپ میں کھلاڑیوں کی بیٹنگ اور فیلڈنگ میں بہتری لانے میں مصروف ہیں۔ انھیں حال ہیں میں ٹیم کا بیٹنگ کنسلٹینٹ مقرر کیا گیا تھا۔

جاوید میانداد نے بی بی سی کے نامہ نگار عبدالرشید شکور سے بات کرتے ہوئے یہ واضح کیا کہ وہ ٹیم کے ساتھ نیوزی لینڈ نہیں جائیں گے اور انہوں نے اس بارے میں پی سی بی کے چیئرمین اعجاز بٹ کو بھی بتادیا ہے کیونکہ ان کے خیال میں سیریز اور دورے میں کوچنگ کا مکمل اختیار کوچ کو ہونا چاہیے۔

جاوید میانداد جو انٹرنیشنل کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے بعد تین مرتبہ پاکستانی ٹیم کے کوچ رہے ہیں کہتے ہیں کہ جب کھلاڑی کھیل رہا ہوتا ہے تو اسے اپنی غلطیوں کا اندازہ نہیں ہوتا اس کے لیے کیمپ میں ان غلطیوں پر قابو پانے کا اچھا موقع ہوتا ہے۔ ’کیونکہ جب وہ دورے پر ہوتے ہیں تو وہاں انہیں سیکھنے کا موقع نہیں ملتا وہاں انہیں پرفارم کرکے دکھانا ہوتا ہے‘۔

میانداد کا کہنا تھا کہ انہیں یقین ہے کہ وہ کیمپ میں کھلاڑیوں کو جو کچھ بتا رہے ہیں اس سے کھلاڑیوں کو فائدہ ہوگا۔

پاکستانی ٹیم نیوزی لینڈ کے دورے میں تین ٹی ٹوئنٹی چھ ون ڈے اور دو ٹیسٹ میچز کھیلے گی۔

اسی بارے میں