پاکستان کی ٹیم 222 پر آؤٹ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یونس خان نے اظہر علی کے ساتھ ملکر ٹیم کو مکمل تباہی سے بچایا

زمبابوے کے دورے کے پہلے دو روزہ سائیڈ میچ پاکستان کی پوری ٹیم صرف دو سو بائیس رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی ہے۔ مڈل آرڈر بیٹسمین اظہر علی اور یونس خان کے علاوہ کوئی کھلاڑی عمدہ بیٹنگ کا مظاہرہ نہ کر سکا۔

زمبابوے الیون کےخلاف میچ میں پاکستان کو پہلا نقصان اس وقت اٹھانا پڑا جب اوپنر محمد حفیظ بغیر کوئی رنز بنائے آؤٹ ہوگئے۔ اس کے بعد دوسرے اوپنر توفیق عمر نے وکٹ پر ٹہر کر پاکستان کی اننگز کو سہارا دینے کی کوشش کی لیکن وہ بھی زیادہ رنز سکور نہ کر سکے اور صرف نو رنز کے انفرادی سکور پر آؤٹ ہو گئے۔

اوپنر محمد حفیظ اور توفیق عمر کے جلد آؤٹ ہونے کے بعد مڈل آرڈر بیٹسمین اظہر علی اور یونس خان نے ایک سو بارہ رنز کی پارٹنرشپ قائم کی۔ اظہر علی جب ایک سو تینتس کے مجموعی سکور پر آؤٹ ہوئے تو ٹیم کے کپتان مصباح الحق کھیلنے میدان میں اترے لیکن وہ کوئی رنز سکور کیے بغیر ہی آؤٹ ہو گئے۔ اگلے بیٹسمین عمر اکمل بھی صرف نو رنز بنا سکے۔

اظہر علی نے سڑسٹھ اور یونس خان نے اکہتر رنز سکور کیے۔

زمبابوے الیون نے پہلے روز کے کھیل کے اختتام تک بغیر کسی نقصان کے تیس رنز بنائے تھے۔ پاکستان کی جانب سے سہیل خان اور جنید خان نے بولنگ کا آغاز کیا لیکن کوئی وکٹ حاصل نہ کر سکے۔

پاکستان کی ٹیم: محمد حفیظ، توفیق عمر، اظہر علی، یونس خان، مصباح الحق، عمر اکمل، عدنان اکمل، سعید اجمل، یاسر شاہ، سہیل خان، اور جیند خان۔

زمبابوے الیون: ٹی ایم کے موائیو، سی جے چبہابھا، ایم این والر، سی آر اروین، زوہاوو، مسانگے، تھریپانو، نکمبے، لیمب، چکابوا، اور مٹیزوا۔