پاکستان کا زمبابوے کے خلاف کلین سویپ

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption شیعب ملک نے تین ایک روزہ اور دو ٹی 20 میچوں میں مجموعی طور چونتیس رنز سکور کیے

زمبابوے کے دارالحکومت ہرارے میں کھیلے جانے والے دوسرے ٹی ٹوئنٹی میچ میں پاکستان نے زمبابوے کو پانچ رنز سے ہرا دیا ہے۔

اس طرح پاکستان نے موجودہ دورے میں کھیلے جانے والے تمام میچ جیت لیے ہیں۔

پاکستان نے دورے پر کھیلے جانے والے ایک ٹیسٹ، تین ایک روزہ اور دو ٹی ٹوئنٹی ٹوئنٹی میچوں میں فتح حاصل کی۔ پاکستان کے مایہ ناز فاسٹ بولر اور موجودہ ٹیم کے کوچ وقار یونس کا یہ آخری دورہ تھا۔ وقار یونس کے دور میں پاکستان کی ٹیم نے مشکل ترین حالات میں عمدہ کھیل کا مظاہرہ کیا۔

ہرارے کے سپورٹس کلب میں کھیلے گئے آخری ٹی ٹوئنٹی میچ پاکستان نے پہلے کھیلتے ہوئے سات وکٹوں کے نقصان پر ایک سو اکتالیس رنز سکور کیے۔ جواب میں زمبابوے نے سات وکٹوں کے نقصان پر ایک سو چھتیس رنز سکور کیے۔

میچ کے آخری اوور میں زمبابوے کو میچ جیتنے کے لیے بیس رنز درکار تھے۔ وکٹ کیپر بیٹسمین تاتیندا تیبو نے فاسٹ بولر سہیل خان کی پہلی گیند پر چھکا لگا کر میچ کو انتہائی دلچسپ بنا دیا۔ زمبابوے کو میچ جیتنے کے لیے آخری گیند پر چھکے کی ضرورت تھےجو وہ نہ لگا سکے۔

پاکستان کی اننگز کی خاص بات اوپنر محمد حفیظ کی عمدہ بیٹنگ تھی۔ جنہوں نے پچاس رنز سکور کیے۔ محمد حفیظ کے علاوہ عمر اکمل نے قدرے بہتر بیٹنگ کی۔ نوجوان بیٹسمین رمیز راجہ اچھی کارکردگی کا مظاہرہ نہ کر سکے۔ فاسٹ بولر جنید خان نے عمدہ بولنگ کا مظاہرہ کیا۔

بار بار آزمائے گئے شیعب ملک ایک مرتبہ پھر بری طرح ناکام رہے۔ شیعب ملک نے تین ایک روزہ اور دو ٹوئنٹی ٹوئنٹی میچوں میں مجموعی طور پر چونتیس رنز سکور کیے۔ شیعب ملک نے،ۙ جو ٹیم میں ایک آل روانڈر کی حیثیت سے شامل کیے جاتے ہیں، پانچ میچوں میں صرف چھ اوور پھینکے جن میں بیٹسمینوں نے سات رنز فی اوور کی شرح پر بیالس رنز سکور کیے۔

زمبابوے نے جب اپنی اننگز تو اسے کے اوپنرز نے قدرے بہتر کھیل کا مظاہرہ کیا لیکن مڈل آرڈر بیٹسمین جیند خان اور سعید اجمل کی عمدہ بولنگ کے سامنے بے بس نظر آئے۔

آخری دو اووروں نےتایندا تیبو نےعمدہ بیٹنگ کا مظاہرہ کیا لیکن وہ بھی ٹیم کو فتح سے ہمکنار نہ کر سکے۔

اسی بارے میں