سنگا کارا کی ڈبل سنچری، میچ ڈرا

کمارا سنگاکارا تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption کمارا سنگاکارا نے عمدہ بلے بازی کا مظاہرہ کیا ہے

ابو ظہبی میں سری لنکا اور پاکستان کے درمیان پہلا ٹیسٹ سنیچر کو ہار جیت کے فیصلے کے بغیر ختم ہو گیا۔ سری لنکا کے بلے باز کمار سنگاکارا گیارہ گھنٹے تک کریز پر موجود رہے اور دو سو گیارہ رن بنا کر آؤٹ ہوئے۔

تفصیلی سکور کارڈ

سنگاکارا اور پرسنا جے وردھنے کے درمیان دوسری اننگز میں دو سو ایک رن کی شراکت ہوئی جس نے سری لنکا کو شکست سے بچانے میں اہم کردار ادا کیا۔ جے وردھنے ایک سو بیس رن بنا کر آؤٹ ہوئے۔

یہ سنگاکارا کے کیریئر کی آٹھویں ڈبل سنچری تھی اور اب وہ ڈبل سنچریاں بنانے والے بلے بازوں کی فہرست میں ڈان بریڈمین اور برائن لارا کے بعد تیسرے نمبر پر ہیں۔ بریڈمین نے بارہ اور لارا نے نو ڈبل سنچریاں بنائی تھیں۔

سری لنکا کی ٹیم نے پہلی اننگز میں ایک سو ستانوے رن بنائے تھے جس کے جواب میں پاکستان کی ٹیم نے چھ وکٹوں کے نقصان پر پانچ سو گیارہ رن بنائے اور اننگز ختم کر دی تھی۔ اس طرح پاکستان کو تین سو چودہ رن کی سبقت حاصل ہوئی تھی۔

سری لنکا کی ٹیم دوسری اننگز میں کھیل کے پانچویں روز چائے کے وقفے کے بعد چار سو تراسی رن بنا کر آؤٹ ہو گئی۔ پاکستان کو میچ جیتنے کے لیے بیس اووروں میں ایک سو ستر رن کا ہدف ملا، لیکن دس اووروں کے بعد کھیل ختم کر دیا گیا۔ اس وقت پاکستان نے ایک وکٹ کے نقصان پر اکیس رن بنائے تھے۔

سری لنکا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ پاکستان کی بیٹنگ کی خاص بات پہلی اننگز میں توفیق عمر کی ڈبل سنچری تھی وہ دو سو چھتیس رن بنا کر رن آؤٹ ہوئے۔ یہ انیس سال بعد کسی پاکستانی اوپنر کی ڈبل سنچری ہے۔

اپنے کیریئر کا دوسرا میچ کھیلنے والے پاکستانی بالر جنید حان نے پہلی اننگز اڑتیس رن کے عوض سری لنکا کے پانچ کھلاڑی آؤٹ کیے تھے۔

اسی بارے میں