آسٹریلیا 47 رنز پر آل آؤٹ

آسٹریلیوی ٹیم، شین واٹسن تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption آل رونڈر شین واٹسن نے پانچ اوروں میں جنوبی افریقہ کے پانچ کھلاڑی آوٹ کر کے سنسنی پھیلا دی

جنوبی افریقہ اور آسٹریلیا کے مابین جاری ٹیسٹ میچ میں اپنی صدی کے کم ترین سکور پر آؤٹ ہوگیا۔ نیو لینڈ میں جاری ٹیسٹ میچ کے دوسرے روز کا کھیل شروع ہوا تو آسٹریلیا نے اپنی پہلی اننگز میں آٹھ وکٹوں کےنقصان پر دو سو چودہ رنز بنائے تھے۔آسٹریلیا نے کپتان مائیکل کلارک کی شاندار اننگز کے بدولت 280 رنز سکور کیے۔

جنوبی افریقہ نے جب اپنے اننگز کا آغاز کیا تو ابتدائی اووروں میں اس نے عمدہ کھیل کا مظاہرہ کیا اور چوبیس کے مجموعی سکور پر اس کی پہلی کی وکٹ گری۔ جنوبی افریقہ کی دوسری وکٹ انچاس کے سکور پر گری لیکن کے بعد اس کی یکے بعد دیگرے وکٹیں گرنی شروع ہوئیں اور چھیانوے کے مجموعی سکور پر پوری ٹیم ڈھیر ہو گئی۔ کپتان گریم سمتھ چونیتیس کے انفرادی سکور کے ساتھ سب سے نمایاں بلے باز رہے۔آسریلیا کے آل رونڈر شین واٹسن نے پانچ اووروں میں سترہ رنز دے پانچ کھلاڑیوں کو پویلین بھیج دیا۔

تفصیلی سکور کارڈ

لیکن آسٹریلیا نے جب اپنی دوسری اننگز کا آغاز کیا تو جنوبی افریقہ کے فاسٹ بولروں نے تباہی مچا دی۔ ایک موقع پر اکیس کے مجموعی سکور پر آسٹریلیا کے نو کھلاڑی آؤٹ ہو چکے تھے اور خطرہ پیدا ہوگیا تھا کہ آسٹریلیا ٹیسٹ کرکٹ کا سب کم سکور کرنے کا نیوزی لینڈ کاریکارڈ توڑ دے گا۔ لیکن آخری جوڑی پیٹر سڈل اور لیون نے ٹیم کا سکور سینتالیس تک لے گئے۔ 1902 کے بعد سے یہ آسٹریلیا کا سب سے کم سکور ہے۔

جنوبی افریقہ کے پہلا ٹیسٹ کھیلنے والے فاسٹ بولر فیلینڈر نے تباہی مچا دی اور صرف سات اوورں میں آسٹریلیا کی پانچ وکٹیں حاصل کر ڈالیں۔ فیلینڈر نے پہلی اننگز میں تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا تھا۔

جنوبی افریقہ کو میچ جیتنے کے 236 رنز کا ہدف ملا جس کا پیچھا کرتے ہوئے اس نے ایک وکٹ کے نقصان پر اکاسی رنز بنا لیے ہیں۔ کپتان گریم سمتھ اور ہاشم آملہ وکٹ پر موجود ہیں۔ جنوبی افریقہ کو میچ جیتنے کے لیے مزید ایک سو پچپن رنز کی ضرورت ہے۔