میلبورن ٹیسٹ: آسٹریلیا کی بیٹنگ لڑکھڑائی

فائل فوٹو تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption شائقین کی نظرین ایک بار پھر سچن تندولکر کی سوویں سنچری پر ہوں گی۔

میلبورن میں بھارت اور آسٹریلیا کی کرکٹ ٹیموں کے درمیان پہلے ٹیسٹ میچ میں آسٹریلیا نے پہلے دن کے کھیل کے اختتام پر چھ وکٹ کے نقصان پر دو سو ستتر رنز بنائے ہیں۔

ٹاس جیتنے کے بعد آسٹریلایائي کپتان مائیکل کلارک نے پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا تھا۔

لیکن آسٹریلیا کی ٹیم اس کا اچھی طرح سے فائدہ نہیں اٹھا سکی اور بھارتی گيند باز وقفے وقفے سے وکٹیں لیتے رہے۔

جب کھیل ختم ہوا تو وکٹ کیپر ہڈن اکیس اور سڈل چونتیس رن پر کھیل رہے تھے۔

تفصیلی سکور کارڈ

امیش یادو نے بھارت کو پہلی کامیابی دلائی جب ان کی گیند پر وارنر کا کیچ دھونی نے پکڑا۔ امیش یادو نے ہی شان مارش کو صفر پر پولین بھیج دیا۔ لیکن اس کے بعد کوؤن اور پوٹنگ نے باری کو سنبھالا۔

لیکن رکی پونٹگ بھی باسٹھ رنز بنا کر یادو کا شکار بنے جن کا کیچ لکشمن نے پکڑا۔ اس کے بعد سپن گیند باز اشون کی آيک گیند پر کوؤن بھی وکٹ کیپر کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوگئے۔

مائیکل ہسّی بغیر کوئی رن بنائے ہی ظہیر خان کا شکار بنے اور بعد میں کپتان کلارک بھی اکتیس کے انفرادی سکور پر ظہیر خان کی ایک گيند پر بولڈ ہوگئے۔

بھارت کی جانب سے تیز گیند باز ظہیر خان اور ایشانت شرما دونوں فٹ قرار کئے گئے تھے اور وہ کھیل رہے ہیں۔

آسٹریلیا کی ٹیم میں سابق کپتان رکی پونٹگ اور مائیک ہسی کو ٹیم میں جگہ ملی ہے۔

بھارت اور آسٹریلیا کے درمیان چار ٹیسٹ میچوں کی سیریز کھیلی جائے گی۔ امید کی جا رہی ہے کہ بہتر فارم کے ساتھ بھارت کی ٹیم اس بار کامیابی حاصل کر سکتی ہے۔

تمام لوگوں کی نگاہیں ایک بار پھر بطورِ خاص سچن تندولکر کی سوویں سنچری پر ہوں گی۔