انگلش ٹیم تیار نہیں تھی: اینڈی فلاور

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption ہمارے کھلاڑیوں کو ذہنی اور جسمانی آرام کی ضرورت ہے، فلاور

انگلینڈ کرکٹ ٹیم کے ڈائریکٹر اینڈی فلاور نے تسلیم کیا ہے کہ ان کی ٹیم پاکستان کے خلاف جاری ٹیسٹ سیریز کے لیے مکمل طور پر تیار نہیں تھی۔

اینڈی فلاور نے بی بی سی سپورٹس کو بتایا کہ ان کے خیال میں انگلینڈ کی ٹیم کرسمس سے پہلے فارغ وقت کی وجہ سے اس سیریز کے لیے پوری طرح تیار نہیں ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ ہم دبئی میں ہر میچ جیتنے کے لیے نہیں آئے اور ہمیں ہر میچ جیتنے کا کوئی حق نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمیں بھی کرکٹ سے چھٹی کی ضرورت ہے اور ہمارے کھلاڑیوں کو ذہنی اور جسمانی آرام کی ضرورت ہے۔

فلاور نے تسلیم کیا کہ پاکستان کے خلاف دبئی ٹیسٹ کے دوران انگلش کھلاڑی پاکستانی ٹیم کا چیلنج قبول نہ کر سکے۔

ٹسیٹ کرکٹ کی عالمی درجہ بندی میں پہلی پوزیشن حاصل کرنے والی انگلش ٹیم پاکستان کے خلاف دبئی ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں ایک سو بانوے اور دوسری اننگز میں ایک سو ساٹھ سکور پر ڈھیر ہو گئی تھی۔

پاکستان کے سعید اجمل نے دبئی ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں انگلینڈ کے سات بلے بازوں کو پویلین کی راہ دکھائی تھی اس بارے میں اینڈی فلاور کا کہنا تھا کہ انگلش بلے باز سیعد اجمل کے خلاف اچھا کھیل پیش نہ کر سکے اور انہوں نے بیٹنگ کے دوران غلط فیصلے کیے۔

اینڈی فلاور کے مطابق ان کے کھلاڑی سنیچر کو مرلن نامی سپن بالنگ مشین کی مدد سے پریکٹس کریں گے اور ان کے پاس یہ چانس ہو گا کہ سپن بالنگ کے خلاف کیا حکمتِ عملی اختیار کریں گے؟

انگلشں کرکٹ ٹیم کے ڈائریکٹر کا کہنا تھا کہ ہم پہلے ٹیسٹ میں ہماری کمزوری پوری طرح عیاں ہو گئی ہے اور ہمیں دوسرے ٹیسٹ کے لیے بھرپور تیاری کرنا ہو گی۔

فلاور نے اپنے کھلاڑیوں کو متنبہ کیا وہ ابوظہبی میں پچیس جنوری سے شروع ہونے والے دوسرے ٹیسٹ کے لیے اپنی کارکردگی کو بہتر بنائیں۔

انہوں نے پاکستان کی کرکٹ کی ٹیم کی کارکردگی کی تعریف کرتے ہوئے تسلیم کیا کہ پاکستان نے کھیل کے ہر شعبے میں ہمیں شکست دی اور وہ جیت کی حقدار تھی۔

واضح رہے کہ انگلینڈ کی کرکٹ ٹیم نے گزشتہ سال اگست میں بھارت کو اوول کے میدان میں ایک اننگز اور آٹھ رنز سے شکست دینے کے بعد سے کوئی ٹیسٹ میچ نہیں کھیلا۔

انگلینڈ کو سنہ دو ہزار دس میں آخری بار آسٹریلیا نے پرتھ ٹیسٹ میچ میں شکست دی تھی۔

اسی بارے میں