’بھارتی ٹیم ہم سے خوف زدہ ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین ذ کاء اشرف کا کہنا ہے کہ بھارتی وزیرِاعظم کی پاکستان کے ساتھ کرکٹ روابط بحال کرنے کی ہدایت کے باوجود بھارتی ٹیم کا پاکستان سے نہ کھیلنا سمجھ سے باہر ہے۔

ذکاء اشرف کے مطابق انہیں اس کی وجہ بظاہر یہی نظر آتی ہے کہ بھارتی ٹیم پاکستان کی موجودہ کارکردگی سے خائف ہے۔

ذکا اشرف نے دبئی میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ورلڈ کپ کے سیمی فائنل کے دوران وزیرِاعظم گیلانی سے ملاقات کے موقع پر بھارتی وزیرِاعظم من موہن سنگھ نے اپنے وزیرِکھیل سے کہا تھا کہ وہ بی سی سی آئی سے پاک بھارت کرکٹ روابط بحال کرنے کا کہیں لیکن اس کے باوجود یہ روابط بحال نہیں ہوسکے۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت کرکٹ روابط بحال کرنا چاہتی ہے جبکہ بی سی سی آئی کے صدر سری نواسن نے گزشتہ دنوں ان سے ملاقات میں کہا کہ وہ کرکٹ تعلقات بحال کرنے کے حق میں ہیں لیکن ان کی حکومت کلیئرنس نہیں دے رہی ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین کا کہنا ہے کہ ایسا محسوس ہوتا ہےکہ جیسے بھارتی سلیکٹرز اور ٹیم منیجمنٹ نہیں چاہتی کہ موجودہ کارکردگی کے ساتھ بھارتی ٹیم پاکستانی ٹیم کے سامنے آئے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کو پاکستانی ٹیم کی شاندار کارکردگی کا اندازہ ہے اور یہ بات سب جاتے ہیں کہ آسٹریلیا کے ہاتھوں چار صفر کی شکست پر بھارتی اتنے زیادہ جذباتی نہیں ہوئے ہیں جتنے وہ پاکستان سے ہارنے پر ہوسکتے ہیں۔

ذکا اشرف نے کہا کہ بھارت چاہے تو پاکستان اس سے کھیلنے کے لیے تیار ہے ، گیند بھارت کے کورٹ میں ہے۔

اسی بارے میں