ٹی ٹوئنٹی کوالیفائنگ کی براہ راست کوریج

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

بین الاقوامی کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کے سربراہ ہارون لوگارٹ نے منگل سے متحدہ عرب امارات میں شروع ہونے والے آئی سی سی ورلڈ ٹوئنٹی ٹوئنٹی عالمی ٹورنامنٹ کے کوالیفائنگ رؤانڈ کو دنیائے کرکٹ کی تاریخ میں ایک بہت بڑا موقع قرار دیا ہے۔

یہ کوئی کھوکھلا دعوی نہیں ہے کیونکہ اس ٹورنامنٹ میں دنیا بھر سے سولہ ممالک کی ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں اور دوسرے اور تیسرے درجے کی ٹیمیں بارہ دنوں کے اندر اکہتر میچ کھیلیں گی جو کہ پانچ مختلف میدانوں پر منعقد ہوں گے۔

ستمبر میں کھیلے جانے والے عالمی ٹی ٹوئنٹی مقابلوں میں اس کوالیفائنگ راونڈ میں کامیاب ہونے والی صرف دو ٹیمیں شرکت کریں گی۔

متحدہ عرب امارات میں ہونے والے مقابلوں سے قبل بارہ کوالیفائنگ راونڈ ہوئے جو گھانا، سلوینیہ، نیپال اور فلوریڈا میں منعقد ہوئے تھے۔

گزشتہ آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی کوالیفائنگ مقابلے سنہ دو ہزآر دس میں منعقد ہوئے تھے جن میں آٹھ ٹیموں نے سترہ میچ کھیلے تھے جو پانچ دنوں کے اندر دو مختلف میدانوں پر ہوئے تھے۔

عالمی ٹی ٹوئنٹی مقابلوں میں انچاس میچ ہوئے تھے جو تینتالیس دنوں میں تیرہ میدانوں پر کھیلے گئے تھے۔

کرکٹ کی تاریخ میں پہلی مرتبہ ان کوالیفائنگ مقابلوں کو عالمی ٹی وی کوریج دی جائے گی۔

آئی سی سی نے دنیا بھر کے کرکٹ شائقین تک یہ کوریج دبئی سے براہ راست پہنچانے کے لیے پہلے ایشیا، افریقہ اور امریکہ میں ٹی وی چینلوں سے معاہدے کر لیے ہیں۔