ایشیاء کپ: پاکستان نے سری لنکا کو ہرا دیا

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 15 مارچ 2012 ,‭ 15:25 GMT 20:25 PST

 

100 50 0

 

100 50 0

 

تازہ ترین سکور اور گروپ ٹیبلز کے لیے آپ کے پاس جاواسکرپٹ ہونا چاہیئے

بنگلہ دیش میں کھیلے جانے والے ایشیا کپ کے ایک میچ میں پاکستان نے سری لنکا کو چھ وکٹوں سے شکست دے دی۔

پاکستان نے مطلوبہ ہدف چار وکٹوں کے نقصان پر انتالیس اعشاریہ پانچ اوورز میں حاصل کر لیا۔

پاکستان کی جانب سے محمد حفیظ اور ناصر جمشید نے اننگز کا آغاز کیا۔

سری لنکا کی طرح پاکستان کا آغاز بھی اچھا نہ تھا اور ایک موقع پر تینتیس رنز کے مجموعی سکور پر اس کی تین وکٹیں گر گئیں۔

پاکستان کی جانب سے عمر اکمل اور مصباح الحق نے چوتھی وکٹ کے لیے ایک سو باون رنز کی شاندار شراکت قائم کی۔

پاکستان کی جانب سے عمر اکمل نے سات چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے ستتر رنز بنائے۔

پاکستان کے دوسرے نمایاں بلے باز کپتان مصباح الحق رہے، انہوں نے نو چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے ناقابلِ شکست بھہتر رنز بنائے۔

سری لنکا کی جانب سے لکمل نے دو، پراسنا اور مہروف نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

جمعرات کو کھیلے جانے والے میچ میں سری لنکا نے ٹاس جیت کر بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔

سری لنکا کی جانب سے جے وردھنے اور دلشان نے اننگز کا آغاز کیا۔

سری لنکا کا آغاز اچھا نہ تھا صرف پینسٹھ رنز کے مجموعی سکور پر اس کے چار کھلاڑی پویلین لوٹ گئے۔

سری لنکا کی جانب سے سنگا کارا اور تھرنگا نے پانچویں وکٹ کے لیے چھیانوے رنز کی شراکت قائم کی۔

سری لنکا کی جانب سے سنگا کارا نے چار چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے اکہتر رنز بنائے۔

سری لنکا کے دوسرے نمایاں بلے باز تھرنگا رہے، انہوں نے چار چوکوں کی مدد سے ستاون رنز بنائے۔

پاکستان کی جانب سے عزیز چیمہ نے چار، سعید اجمل نے تین، عمر گل نے دو اور حماد اعظم نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

پاکستان کے اعزاز چیمہ کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔