برتری کے خاتمے کے لیے مزید 201 رن درکار

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption مائیکل کلارک نے تہتر رنز کی اہم اننگز کھیلی

برج ٹاؤن میں کھیلے جا رہے پہلے ٹیسٹ کے تیسرے دن کھیل کے اختتام پر آسٹریلیا نے ویسٹ انڈیز کے خلاف اپنی پہلی اننگز میں پانچ وکٹوں کے پر دو سو اڑتالیس رنز بنا لیے ہیں۔

آسٹریلیا کی جانب سے مائیکل ہسی اور میتھیو ویڈ کریز پر موجود ہیں اور آسٹریلیا کو ویسٹ انڈین برتری ختم کرنے کے لیے مزید دو سو ایک رنز درکار ہیں۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

میچ کے تیسرے دن آسٹریلیا نے اپنی پہلی اننگز چوالیس رنز سے شروع کی تو سکور میں چھ رن کے اضافے کے بعد ہی اسے پہلا نقصان اٹھانا پڑا۔

آؤٹ ہونے والے بلے باز کوون تھے جو صرف چودہ رن بنا سکے۔ پینسٹھ کے سکور پر آسٹریلیا کی دوسری وکٹ وارنر کی شکل میں گری جنہوں نے بیالیس رنز کی اننگز کھیلی۔

رکی پونٹنگ صرف چار رن بنا سکے اور رن آؤٹ ہوگئے۔ ایک سو تینتیس کے سکور پر آسٹریلیا کو شین واٹسن کی وکٹ کا نقصان اٹھانا پڑا۔

تاہم اس موقع پر کپتان مائیکل کلارک نے مائیک ہسی کے ساتھ مل کر پانچویں وکٹ کے لیے بیاسی رنز کی اہم شراکت قائم کی جس کا خاتمہ دو سو پندرہ کے مجموعی سکور پر مائیکل کلارک کے آؤٹ ہونے پر ہوا۔ انہوں نے تہتر رنز بنائے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption یہ چندرپال کے ٹیسٹ کیرئر کی چوبیسویں سنچری تھی

ویسٹ انڈیز کی جانب سے کپتان ڈیرن سیمی نے دو جبکہ بیشو اور روچ نے ایک، ایک وکٹ حاصل کی۔

اس سے قبل میچ کے دوسرے دن شیو نرائن چندرپال کی عمدہ سنچری کی بدولت ویسٹ انڈیز نے اپنی پہلی اننگز نو وکٹ کے نقصان پر چار سو انچاس رنز بنا کر ڈیکلیئر کر دی تھی۔

چندرپال نے ایک سو تین رنز بنائے اور آؤٹ نہیں ہوئے۔ یہ ان کے ٹیسٹ کیرئر کی چوبیسویں سنچری تھی جو انہوں نے نو چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے مکمل کی۔

یہ تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا پہلا میچ ہے۔ سیریز کا دوسرا میچ پندرہ سے انیس اپریل تک پورٹ آف سپین اور تیسرا اور آخری ٹیسٹ تیئیس سے ستائیس اپریل تک روزیو میں کھیلا جائے گا۔

اسی بارے میں