لندن میراتھن میں کینیائی کھلاڑیوں کی جیت

لندن میراتھن کی ایک فائل فوٹو تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption لندن میراتھن میں سینتیس ہزار اتھیلیٹ حصہ لے رہے ہیں

کینیا کے ایتھلیٹ ولسن کپسانگ نے لندن میراتھن جیت لی ہے۔ انہوں نے یہ فاصلہ دو گھنٹے، چار منٹ اور تینتالیس سیکنڈوں میں طے کیا۔ اسی طرح کینیا کی خاتون اتھیلیٹ مے کیٹنی نے لگا تار دوسری بار عورتوں کی میراتھن جیت لی ہے ۔ انہوں نے یہ فاصلہ دوگھنٹے، اٹھارہ منٹ اور چھتیس سیکنڈ میں طے کیا۔

ایک اندازے کے مطابق سینتیس ہزار شوقیہ کھلاڑی، مشہور شخصیات اس ریس میں حصہ لے رہے ہیں۔

برطانوی وقت کے مطابق خواتین کھلاڑیوں کی دوڑ کا آغاز صبح نو بجے ہوا، ایلیٹ وہیل چئیر کھلاڑیوں کی دوڑ نو بج کر بیس منٹ پر شروع ہوئی جبکہ مرد ایتھلیٹس کھلاڑیوں کی دوڑ نو بج کر پیتالیس منٹ پر شروع ہوگی۔

گینیس ورلڈ ریکارڈ کے مطابق اس میراتھن میں شامل لوگوں میں سو سے زائد ایتھلیٹ ماضی کے ریکارڈز توڑنے کی کوشش کریں۔ ریکارڈ بنانے کی کوشش کرنے والوں میں بیساکھی کے سہارے دوڑنے والے ایتھلیٹس بھی شامل ہیں۔

یہ میراتھن کئی ایتھلیٹس کے لیے اولمپک میں جگہ بنانے کا آخری موقع ہے۔

موسم محکمیات نے پیشنگوئی کی ہے کہ کہ اتوار کی صبح لندن کا موسم خشک اور روشن ہوگا لیکن خبردار کیا ہے شام کو بارش کے امکانات ہیں۔

بیساکھی کے سہارے دوڑنے والے کھلاڑیوں میں ستائس سالہ چارلس فلپس اور بائیس سالہ جارج فلپس کوشش کریں گیں کہ بیساکھی پر سب سے تیز آٹھ گھنٹے پچیس منٹ دوڑنے کا ریکارڈ توڑا جائے۔

مغربی لندن کےعلاقے ہیمرسمتھ سے تعلق رکھنے والے بھائی بہن کے اس جوڑے نے بچپن میں سرکس کا فن سیکھا تھا۔ چارلس اور جارج فلپس کی ماں سرطان کی بیماری کے سبب انتقال کرگئی تھیں اور ان دونوں کھلاڑیوں کی کوشش رہے گی کہ اس میراتھن میں پانچ ہزار پاؤنڈ جیت کر وہ میکملن کینسر سپورٹ کو عطیہ کرسکیں۔

اس میراتھن میں کئی ہزار افراد وہ ہیں جو دوڑنے کا شوق رکھتے ہیں اور اس شوق سے وہ عطیہ کے لیے رقم جیتنا چاہتے ہیں۔ ایک اندازے کے مطابق میراتھن سے ایک بڑی رقم عطیہ کے لیے جمع کی جاسکتی ہے۔

اس میراتھن میں ٹی وی اداکار، نیوز ریڈرز کے علاوہ بعض سیاستدان بھی حصہ لے رہے ہیں۔

بی بی سی کی نیوز ریڈر سوفی راوورتھ کا کہنا ہے کہ گزشتہ برس کی میراتھن میں گر جانے کے بعد وہ امید کر رہی ہیں کہ اس میراتھن میں خوب دوڑیں۔ گزشتہ برس کی میراتھن میں سوفی جیسی ہی تئیس میل کے نشان پر پہنچی سڑک پر لگی ایک روکاوٹ سے ٹکرا کر گر گئی اور بے ہوش ہوگئی تھیں۔.

اس کے علاوہ برطانوی ماڈل نیل میک اینڈریو بھی اس میراتھن میں حصہ لے رہیں ہیں۔ یہ ان کی چھٹی میراتھن ہے۔