کپتان کا کام ٹیم چننا نہیں اسے کِھلانا ہے

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

پاکستان کی قومی ٹی ٹوئنٹی ٹیم کے کپتان محمد حفیظ کا کہنا ہے کہ انہیں سلیکٹرز کی منتخب کردہ ٹیم پر پورا اعتماد ہے۔ انہوں نے کہا کہ سلیکٹرز کا کام ٹیم منتخب کرنا جبکہ کپتان کا اس ٹیم کو میدان میں کھیلانا ہے۔

سری لنکا کے خلاف سیریز کی تیاری کے لیے قذافی سٹیڈیم میں لگائے گئے کیمپ کے دوسرے روز محمد حفیظ نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ انہیں جو پندرہ رکنی ٹیم دی گئی ہے اس کے تمام کھلاڑی فٹ ہیں اور وہ ان سے مطمئن ہیں۔

محمد حفیظ نے کہا ’ان کی ٹیم گزشتہ ڈیڑھ دو ماہ سے انٹرنیشنل کرکٹ نہیں کھیل رہی اور ہمارے کھلاڑی ٹی ٹوئنٹی کی پریکٹس میں بھی نہیں ہیں جبکہ اگر آپ موازنہ کریں تو دوسری ٹیموں کے کھلاڑیوں کو آئی پی ایل کھیلنے کا موقع مل رہا ہے۔ اس سے انہیں اپنی کارکردگی بہتر کرنے کا موقع مل رہا ہے جو موقع پاکستانی کرکٹرز کو نہیں ملا۔‘‘

محمد حفیظ کے بقول ان وجوہات کے باوجود ہم پوری طرح تیار ہیں اور اس کیمپ میں دو ون ڈے اور دو ٹی ٹوئنٹی میچز اسی لیے رکھے گئے ہیں کہ ٹیم کو میچ پریکٹس مل سکے۔

بی بی سی کی نامہ نگار مناء رانا کے مطابق محمد حفیظ نے فاسٹ بالر محمد سمیع کی ٹیم میں واپسی کی حمایت کی ہے۔ محمد حفیظ کا کہنا ہے محمد سمیع کا چناؤ ان کی ڈومیسٹک کرکٹ میں بہترین کار کردگی کے سبب کیا گیا ہے اور وہ اچھی فارم میں ہیں۔

وہ کھلاڑی جو کچھ وقفے کے بعد دوبارہ پاکستان کی ٹیم کا حصہ بنیں ہیں، ان کی بابت محمد حفیظ نے کہا کہ وہ ان کھلاڑیوں کے لیے ایسا ماحول بنانے کی کوشش کر رہے ہیں کہ ان پر کوئی ایسا دباؤ نہ ہو کہ ان کی ٹیم میں واپسی ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے ہاں کوئی کھلاڑی دو تین بار کامیاب نہ ہو تو اس کی بابت رویے سخت ہو جاتے ہیں جو کہ افسوس ناک بات ہے۔ شعیب ملک، خالد لطیف اور احمد شہزاد پہلے بھی اچھی کارکردگی دیکھا چکے ہیں اور ان کے لیے کوچ ڈیو واٹ مور اور باقی کھلاڑیوں کی یہی کوشش ہے کہ انہیں یہ محسوس نہ کروایا جائے کہ یہ ان کی ٹیم میں واپسی ہے۔

محمد حفیظ نے کہا کہ جب بھی کوئی کپتان بنتا ہے تو باقی کھلاڑیوں نے ہیشہ اس کی حمایت کی ہے کیونکہ یہ کسی ایک شخص کی ٹیم نہیں بلکہ یہ سب کی ٹیم ہے اور سب کو اس کی جیت کے لیے پر فارم کرنا ہے۔

انہوں نے مصباح الحق کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے بہت اچھے طریقے سے ٹیم کی رہنمائی کی ہے اور سب دیکھیں گے کہ سری لنکا کے خلاف پاکستان کی ٹیم بہت اچھا کھیل پیش کرے گی اور یہ دورہ کامیاب ہو گا۔

اسی بارے میں