لارڈز: انگلینڈ کے اوپنرز ناکام

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption کیمار روچ نے چوتھے دن کے اختتامی اوورز میں ویسٹ انڈیز کو دوہری کامیابی دلوائی

ویسٹ انڈیز کے خلاف لارڈز ٹیسٹ میں انگلینڈ کو فتح کے لیے مزید 181 رنز درکار ہیں جبکہ اس کی آٹھ وکٹیں باقی ہیں۔

چوتھے دن کھیل کے اختتام پر انگلینڈ نے اپنی دوسری اننگز میں دو وکٹ کے نقصان پر دس رن بنائے تھے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

آؤٹ ہونے والے انگلش بلے باز پہلی اننگز میں سنچری بنانے والے کپتان اینڈریو سٹراس اور نائٹ واچ مین جیمز اینڈرسن تھے۔ ان دونوں کو کیمار روچ نے آؤٹ کیا۔

اس سے قبل ویسٹ انڈیز کی ٹیم اپنی دوسری اننگز میں تین سو پینتالیس رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

ایک موقع پر ویسٹ انڈیز کی چار وکٹیں صرف پینسٹھ رنز پر گر چکی تھیں لیکن پھر شیونرائن چندرپال اور مارون سیموئلز نے ایک سو ستاون رنز کی عمدہ شراکت قائم کر کے اپنی ٹیم کو مشکلات سے نکالا۔

پہلی اننگز میں ویسٹ انڈیز کے ٹاپ سکورر چندرپال اس اننگز میں بھی سب سے زیادہ رن بنانے والے بلے باز رہے۔ وہ نو رن کی کمی سے سنچری مکمل نہ کر سکے اور اکانوے کے سکور پر سوان کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوگئے۔

ان کا ساتھ دینے والے سیموئلز نے چھیاسی رنز کی اہم اننگز کھیلی۔

انگلینڈ کی جانب سے سٹورٹ براڈ نے چار وکٹیں لیں۔ اس میچ میں انہوں نے کل گیارہ وکٹیں حاصل کی ہیں۔ براڈ کے علاوہ گریم سوان نے تین جبکہ بریسنن اور اینڈرسن نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

اس میچ میں اپنی پہلی اننگز میں ویسٹ انڈیز نے دو سو تینتالیس رنز بنائے تھے جس کے جواب میں انگلینڈ کی پوری ٹیم پہلی اننگز میں سٹراس کی سنچری کی بدولت تین سو اٹھانوے رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی تھی۔

اسی بارے میں