’اولمپکس کے ٹکٹوں کی بلیک مارکیٹنگ‘

Image caption برطانوی قانون کے مطابق لندن اولمپکس کے ٹکٹ بلیک مارکیٹ میں فروخت کرنا جرم ہے

بی بی سی کی ایک تحقیقاتی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ اولمپکس کے ایک اعلیٰ اہلکار ہزاروں پاؤنڈ مالیت کے لندن اولمپکس ٹکٹس بلیک مارکیٹ میں فروخت کرنا چاہتے تھے۔

یوکرائن نیشنل اولمپکس کمیٹی’ این او سی‘ کے سربراہ ولادیمیر جارشچنکوو نے خود کو برطانیہ میں غیر قانونی ٹکٹ ڈیلر ظاہر کرنے والے بی بی سی کے ایک نامہ نگار کو بتایا کہ ان کے پاس لندن اولمپکس کے سو ٹکٹ برائے فروخت ہو سکتے ہیں۔

ان اطلاعات کے بعد یوکرائن کی اولمپکس کمیٹی کے چیئرمین نے ولودیمیئرجارشچنکوو کو تحقیقات مکمل ہونے تک معطل کر دیا ہے۔

لندن اولمپکس کے ٹکٹ غیر قانونی ٹکٹ ڈیلرز کو فروخت کرنا ایک مجرمانہ فعل ہے اور اس پر بیس ہزار پاؤنڈ تک جرمانہ ہو سکتا ہے۔

ولادیمیرجارشچنکوو نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے کبھی بھی برطانیہ میں ٹکٹ فروخت کرنے کا ارادہ نہیں کیا۔

خیال رہے کہ لندن اولمپکس کے ٹکٹ یورپی اتحاد سے باہر فروخت کرنے کے حوالے سے سخت قواعد و ضوابط وضع کیے گئے ہیں تاکہ بلیک مارکیٹ میں ٹکٹوں کی فروخت کو روکا جا سکے۔

یورپی اتحاد سے باہر کسی ملک میں صرف اسی شخص کو ٹکٹ فروخت کیا جا سکتا ہے جو وہاں کا شہری ہو۔

بی بی سی کے نامہ نگار نے یوکرائن کی نیشنل اولمپکس کمیٹی کی جانب سے ممکنہ طور پر ٹکٹ فروخت کیے جانے کی اطلاعات پر ولادیمیرجارشچنکوو سے رابطہ کیا اور انہوں نے نامہ نگار کو تصدیق کی کہ وہ ٹکٹ فروخت کر سکتے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption ولودیمیئرجارشچنکوو سنہ انیس سو ستانوے سے’ این او سی‘ کے سربراہ تھے

نامہ نگار نے برطانیہ میں ٹکٹ فروخت کرنے والے غیرقانونی ڈیلر کے طور پر اپنا تعارف کرایا تھا۔

ولادیمیرجارشچنکوو نے نامہ نگار سے کہا ’میں سمجھتا ہوں کہ آپ ڈیلر ہیں اسے لیے آپ میرے لیے پہلی اور اول ترجیح ہیں، اگر ہمارے پاس اضافی ٹکٹ ہوئے تو ہم آپ سے رابطہ کریں گے‘۔

بعد میں مشرقی لندن کے اولپمکس پارک کے نزدیک ایک ہوٹل میں ایک ملاقات میں ولادیمیرجارشچنکوو نے وضاحت کی کہ وہ یوکرائن میں اولمپکس شائقین، کوچز اور اہلکاروں کو ٹکٹ فراہم کر رہے ہیں تاہم بعد میں جب یہ کام مکمل ہوا تو وہ اضافی سو ٹکٹ فروخت کرنے کی تیاری کر رہے تھے۔

نامہ نگار نے جب ان سے پوچھا کہ ٹکٹوں کے عوض رقم کی ادائیگی کس طرح کرنی ہے، کیا یہ بینک کے ذریعے منتقل کی جا سکتی ہے تو اس پر انہوں نے کہا کہ میرے خیال میں جب یہ موقع آیا تو کیش یا نقد رقم بہتر رہے گی، ممکن ہے؟

لندن اولمپکس کے ایک ترجمان کا کہنا ہے کہ’ہم نے ان الزامات کو انتہائی سنجیدگی سے لیا ہے اور ہم نے اس سلسلے میں بی بی سی سے کہا ہے کہ وہ اس ضمن میں دستیاب تمام شواہد تک رسائی دے تاکہ فوری طور پر تحقیقات شروع کی جا سکیں۔‘

لندن پولیس کے ترجمان کا کہنا ہے کہ’ہم نے بی بی سی لندن سے رابطہ کیا ہے اور ہم چاہتے ہیں کہ ان کے پاس اس وقت موجود تمام مواد فراہم کیا جائے تاکہ اس کا جامع جائزہ لیا جا سکے۔‘

سکاٹ لینڈ یارڈ نے عوام سے کہا ہے کہ ٹکٹس صرف لندن دو ہزار بارہ کی ویب سائٹس سے خریدیں اور یہ ہی سب سے محفوظ طریقہ ہے۔

اسی بارے میں