شطرنج کھلاڑی آنند پانچویں بار چیمپیئن

بھارت کے دفاعی عالمی چیمپئن وشوناتھن آنند تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بھارت کے دفاعی عالمی چیمپئن وشوناتھن آنند نے پانچویں مرتبہ عالمی چیمپیئن کا خطاب جیتا ہے۔

بھارت کے دفاعی عالمی چیمپئن وشوناتھن آنند نے اسرائیلی گرینڈ ماسٹر بورس گیلفاند کو ہرا کر پانچویں مرتبہ شطرنج کا عالمی خطاب جیت لیا ہے۔

دونوں کھلاڑیوں کے درمیان پہلے بارہ مقابلے ہوئے تھے جن میں دونوں نے ایک ایک میچ جیتا تھا جبکہ دس میں ہار جیت کافیصلہ نہیں ہوسکا تھا۔

یہ مقابلہ روس کے دارالحکومت ماسکو میں ہوا۔ خطاب کا فیصلہ کرنے کے لیے تیز رفتار سے کھیلے جانے والے میچوں کا سہارا لیا گیا جسے ماہرین فٹبال کے پنالٹی شوٹ آؤٹ سے تعبیر کرتے ہیں۔

بدھ کو انہوں نے چار تیز رفتار بازیوں میں سے دو جیت کر یہ اعزاز حاصل کیا۔ اس سے پہلے وہ دو ہزار دو اور دو ہزار دس کے درمیان چار مرتبہ عالمی خطاب جیت چکے ہیں۔

اس کامیابی کے لیے آنند کو پندرہ لاکھ ڈالر حاصل ہوں گے جبکہ گیلفاند کے حصے میں دس لاکھ ڈالر آئیں گے۔

وشونانتھن آنند کا شمار دنیا کے عظیم ترین کھلاڑیوں میں کیا جاتا ہے۔ انہوں نے انیس سو پچاسی میں انٹرنیشنل ماسٹر کا درجہ اور مرتبہ حاصل کیا تھا۔ اُس وقت وہ صرف پندرہ برس کے تھے۔

انیس سو ستاسی میں وہ انڈیا کے پہلے اور اسوقت دنیا کے سب سے کم عمر گرینڈ ماسٹر بنے۔

انہوں نے اپنا پہلا بڑا عالمی خطاب انیس سو اکانوے میں جیتا تھا۔ اس مقابلے میں عالمی چیمپیئن گیری کاسپاروف اور سابق عالمی چیمپئن اناتولی کارپوف نے بھی حصہ لیا تھا۔

اسی بارے میں