فیفا کی درد کش ادویات کے استعمال پر تنبیہ

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

فٹبال کی عالمی تنظیم فیفا کے ایک طبی اہلکار نے بین الاقوامی فٹ بالرز کو خبردار کیا ہے کہ وہ ٹورنامنٹ کے دوران کسی بھی قسم کے درد کش ادویات لینے سے اپنی صحت کو خطرے میں ڈال سکتے ہیں۔

ڈاکٹر جِری ڈورک نے بی بی سی کو بتایا دو سال قبل جنوبی افریقہ میں ہونے والے فٹ بال کے عالمی مقابلوں کے دوران تقریباً چالیس فیصد کھلاڑی ہر میچ سے قبل دوائیں استعمال کرتے تھے۔

انہوں نے فٹبال کی عالمی تنظیم سے استدعا کی ہے کہ وہ رواں سال منعقد ہونے والے یورو فٹبال کپ شروع ہونے سے پہلے اس سلسلے میں اقدامات کرے۔

انہوں نے بی بی سی کو بتایا کہ نئے فٹبالرز سینیئر کھلاڑیوں کی پیروی کرتے ہوئے درد کش ادویات کثرت سے استعمال کرتے ہیں۔

فیفا کی میڈیکل ٹیم نے ڈاکڑوں سے کہا ہے کہ وہ سنہ دو ہزار دس کے فٹبال کے عالمی کپ کے ہر میچ سے پہلے ان ادویات کو استعمال کرنے والے ایسے کھلاڑیوں کی فہرست انہیں پیش کریں۔

بین الاقوامی سطح پر منعقد ہونے والے فٹبال ٹورنامنٹس کے لیے ہونے والے گزشتہ سروے میں یہ بات سامنے آئی تھی کہ متعدد کھلاڑی درد کش ادویات استعمال کرتے رہے ہیں۔

جنوبی افریقہ میں سنہ دو ہزار دس کے فٹبال کے عالمی کپ کے نتائج برطانوی جنرل آف سپورٹس میڈیسن نامی جریدے میں شائع ہوئے ہیں جن کے مطابق اس دوران کھلاڑیوں نے سب سے زیادہ درد کش ادویات استعمال کیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ درد کش ادویات استمعال کرنے سے بلخصوص پیشہ ور کھیل کو خطرات ہو سکتے ہیں۔

ماہرین کے مطابق کھیل کے دوران ان کھلاڑیوں کے گردے حسّاس ہو چکے ہوتے ہیں اور ایسے میں دوائیں انہیں نقصان پہنچا سکتی ہیں۔

اسی بارے میں