بھارت: ٹینس کھلاڑیوں میں شدید اختلافات

Image caption لینڈر پیس بھارت کے سب سے بہترین کھلاڑی مانے جاتے ہیں

بھارت کے ٹینس کھلاڑی لینڈر پیس نے کہا ہے کہ اگر ڈبلز کے لیے انہیں اچھا ساتھی فراہم نہیں مہیا کیا گيا تو وہ اولمپکس کا بائیکاٹ کر سکتے ہیں۔

آل انڈین ٹینس ایسو سی ایشن ( اے آئی ٹی اے) کو تحریر کیےگئے اپنے ایک خط میں انہوں نے اس فیصلے پر نکتہ چینی کی ہے کہ اولمپکس میں بھارت کی جانب سے دو مختلف ٹیمیں بھیجی جائیں۔

لینڈر پیس نے کہا ہے کہ انہیں مہیش بھوپتی اور روہن بوپنّا کے ساتھ کھیلنے میں کوئي پریشانی نہیں ہے اگر وہ ساتھ دیں تو لیکن انہیں اپنا پارٹنر چننے کا موقع ملنا چاہیے۔

واضح رہے کہ بھارت کے معروف ٹینس کھلاڑی مہیش بھوپتی اور لینڈر پیس، جو کبھی ایک ساتھ کھیلا کرتے تھے، کے درمیان اچھے تعلقات نہیں ہیں اس لیے بھوپتی نے ان کے ساتھ کھیلنے سے منع کر دیا تھا۔

پاکستانی ٹینس کھلاڑی اعصام الحق کے ساتھ کھیلنے والے بھارتی کھلاڑي روہن بوپنّا نے اعصام کو چھوڑ کر بھوپتی کے ساتھ اولمپکس کے لیے تیاری کی ہے اور یہ دونوں کھلاڑی ایک ساتھ کھیلنا چاہتے ہیں۔

یہی وجہ ہے کہ جب مہیش بھوپتی نے لینڈر پیس کے ساتھ کھیلنے سے منع کیا تو بوپنّا نے بھی پیس کا ساتھ دینے انکار کردیا۔

Image caption مہیش بھوپتی اور ثانیہ مرزا نے حال میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے

اطلاعات کے مطابق بھوپتی سے ناراضگی کے سبب لینڈر پیس بوپنّا کے ساتھ کھیلنے کے خواہشند مند ہیں لیکن اعصام الحق سے علحیدگی کے بعد بوپنا بھوپتی کے ساتھ تیاری کرتے رہے ہیں۔

اسی تنازع کے سبب اے ٹی آئی اے نے دو ٹیمیں بھیجنے کا فیصلہ کیا تھا لیکن لینڈر پیس نے اس پر سخت نکتہ چینی کی ہے اور کہا ہے کہ اگر انہیں بہتر ساتھی نہ ملا تو پھر وہ مقابلے سے باہر ہوسکتے ہیں۔

عالمی رینکنگ میں لینڈر پیس بھارت کے سب سے بہترین کھلاڑی ہیں اور وہ مکس ڈبلز میں بھی بھارت کی سٹار کھلاڑی ثانیہ مرزا کے ساتھ کھیلنا چاہتے ہیں۔

جہاں تک ثانیہ کا سوال ہے تو ان کی جانب سے اس بارے میں کوئي بیان سامنے نہیں آیا ہے لیکن ماضی میں وہ مہیش بھوپتی کے ساتھ کھیلتی رہی ہیں اور انہیں اپنا اچھا ساتھی بتاتی ہیں۔

بھارتی ٹینس ایسو سی ایشن نے اس سلے میں بدھ کو ایک میٹنگ طلب کی تھی لیکن حکام نے اسے جمعرات تک کے لیے ملتوی کردیا ہے۔