ڈی آر ایس کا استعمال لازمی نہیں: آئی سی سی

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے ٹیسٹ اور ایک روزہ بین الاقوامی میچوں کے لیے ڈیسیژن ریویو سسٹم (ڈی آر ایس) کو لازمی قرار کی نئی کوشش کو مسترد کر دیا ہے۔

اس بات کا اعلان آئی سی سی نے بدھ کو کوالالمپور میں ہونے والے ایک اجلاس کے بعد کیا۔

آئی سی سی بورڈ کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان میں اس فیصلے کی کوئی وجہ نہیں بتائی گئی۔

واضح رہے کہ بھارتی کرکٹ بورڈ ڈی آر ایس کے استعمال کا مخالف رہا ہے۔

آئی سی سی بورڈ کے بیان میں مذید کہا گیا ہے کہ ڈی آر ایس کے استعمال کا موجودہ طریقہ جاری رہے گا۔

موجودہ طریقے کے مطابق ڈی آر ایس کے استمعال کا فیصلہ کرکٹ سیریزکھیلنے والے دو ممالک باہمی رضا مندی سے کرتے ہیں۔

اس سے قبل انگلینڈ کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان مائیکل وان نے کہا تھا کہ آئی سی سی بھارت کے ساتھ ضروری ویڈیو ٹیکنالوجی کے حوالے سے ٹھوس موقف اختیار کرے۔

مائیکل وان کا کہنا تھا کہ ان کے خیال میں ڈی آر ایس سے فاش غلطیاں کم کرنے میں مدد ملے گی۔

واضح رہے کہ آئی سی سی تمام بین الاقوامی میچوں میں ڈی آر ایس کو استعمال کرنا چاہتی ہے تاہم بھارتی کرکٹ بورڈ اس کی مخالفت کر رہا ہے۔

دوسری جانب بھارتی کرکٹ بورڈ کا موقف ہے کہ ڈی آر ایس فول پروف نہیں ہے۔

مائیکل وان نے بی بی سی ریڈیو فائیو کو بتایا کہ آئی سی سی کو اپنا اختیار استعمال کرتے ہوئے بھارت کو بتانا ہو گا ڈی آر ایس استعمال ہو رہا ہے اور آپ بھی اس کے عادی ہو جائیں۔

ڈی آر ایس کو سب سے پہلے نومبر سنہ دو ہزار نو میں پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان ٹیسٹ میچ میں استعمال کیا گیا تاہم اس کا مزید استعمال کرکٹ بورڈ کی صوابدید پر چھوڑ دیا گیا۔

سری لنکن کرکٹ بورڈ نے انگلینڈ کے خلاف ہوم سیریز میں ڈی آر ایس استعمال کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاہم اس کا اطلاق پاکستان کے خلاف موجودہ ٹیسٹ سیریز میں نہیں ہے۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے کوچ ڈیو واٹمور نے سری لنکا کے اس فیصلے پر تنقید کی ہے۔

واضح رہے کہ بھارت نے انگلینڈ کے خلاف کھیلی جانے والی سیریز میں ڈی آر ایس استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی تھی اور وہ اس سیریز میں کوئی ٹیسٹ اور ایک روزہ میچ جیت نہیں سکا تھا۔

اطلاعات کے مطابق بھارت انگلینڈ کے خلاف رواں سال نومبر سے شروع ہونے والی چار ٹیسٹ، پانچ ایک روزہ اور ایک ٹی ٹوئنٹی ٹوئنٹی میچ پر مشتمل سیریز میں بھی ڈی آر ایس کی مخالف کرے گا۔

اسی بارے میں