آسٹریلیا کو مسلسل دوسری شکست

آخری وقت اشاعت:  اتوار 1 جولائ 2012 ,‭ 14:03 GMT 19:03 PST

 

100 50 0

 

100 50 0

 

تازہ ترین سکور اور گروپ ٹیبلز کے لیے آپ کے پاس جاواسکرپٹ ہونا چاہیئے

لندن میں اوول کرکٹ گراؤنڈ پر کھیلے گئے دوسرے ایک روزہ میچ میں آسٹریلیا کو روایتی حریف انگلینڈ کے ہاتھوں مسلسل دوسری شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

انگلینڈ نے اس میچ میں آسٹریلیا کو چھ وکٹوں سے ہرا کر ایک آسٹریلیا کے خلاف پانچ ایک روزہ میچوں کی سیریز میں دو صفر سے سبقت حاصل کر لی ہے۔

اس میچ میں آسٹریلیا نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا تھا اور اُس نے مقررہ پچاس اوور میں انگلینڈ کو میچ جیتنے کے لیے دو سو باون رنز کا ہدف دیا تھا۔

آسٹریلیا نے سات وکٹوں کے نقصان پر دو سو اکیاون رنز بنائے تھے۔ آسٹریلوی اننگز میں شین واٹسن اور بیلی نے نصف سنچریاں بنائیں۔ واٹسن چھیاسٹھ اور بیلی پینسٹھ رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

انگلینڈ کی جانب سے ٹم بریسنن دو وکٹوں کے ساتھ نمایاں رہے۔

جواب میں انگلینڈ نے مقررہ ہدف چار وکٹ کے نقصان پر حاصل کر لیا۔ انگلش بلے بازوں روی بوپارا اور ایئن بیل نے اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا بوپارا نے پچاس گیندوں پر بیاسی رنز سکور کیے جبکہ ایئن بیل نے ایک سو تیرہ گیندوں پر پچھہتر رنز بنائے۔

اوئن مورگن نے اس میچ میں تینتالیس رنز بنائے اور آؤٹ نہیں ہوئے۔ پہلے میچ میں بھی انھوں نے ناقابلِ شکست اننگز کھیلی تھی۔

آسٹریلیا کے تیز رفتار بالر بریٹ لی اور جانسن کوئی وکٹ حاصل نہ کر سکے اور دونوں قدرے مہنگے بھی ثابت ہوئے۔ بریٹ لی نے اپنے دس اوور میں اٹھاون رنز دیے جبکہ جانسن نے سات اوور پھینکے اور انھیں تینتالیس رنز پڑے۔

آسٹریلیا کی طرف سے می کے، واٹسن اور کپتان کلارک نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

اس میچ کے لیے آسٹریلوی ٹیم میں دو تبدیلیاں کی گئیں اور سٹیو سمتھ کی جگہ پیٹر فارسٹ اور زخمی ہو کر اس دورے سے باہر ہو جانے والے پِیٹ کمنز کی جگہ مچل جانسن کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

انگلش ٹیم میں زخمی جیمز اینڈرسن کی جگہ جیڈ ڈرن بیچ کو شامل کیا گیا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔