فیرر کو شکست، مرے سیمی فائنل میں

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption فیرر نے اینڈی کو کلے کورٹ پر شکست دی ہوئی ہے اور یہ دونوں کھلاڑیوں کا گھاس کے کورٹ پر پہلا مقابلہ ہو گا

برطانوی کھلاڑی اینڈی مرے عالمی نمبر سات کھلاڑی ڈیوڈ فیرر کو ومبلڈن کے کوارٹر فائنل میں شکست دے کر سیمی فائنل میں پہنچ گئے ہیں۔

رافیل ندال کی شکست کے بعد عالمی نمبر چار کھلاڑی اینڈی مرے کا ومبلڈن جیتنے کی امید بڑھ گئی ہے۔ اگر وہ ومبلڈن جیت جاتے ہیں تو وہ اپنا پہلا گرینڈ سلیم حاصل کریں گے۔

اینڈی مرے نے سپین کے فیرر تین گھنٹے اور باون منٹ کے سخت مقابلے کے بعد شکست دی۔

مرے کو فیرر کے ہاتھوں فرنچ اوپن کے کوارٹر فائنل میں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

جمعہ کو مری کا سیمی فائنل میں عالمی نمبر پانچ کھلاڑی جو ولفرڈ کے مدِمقابل ہوں گے۔اینڈی مرے نے کھیل کا آغاز کچہ اچھا نہ کیا لیکن بعد میں انہوں نے عمدہ کھیل پیش کیا۔

اینڈی نے میچ جیتنے کے بعد بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا ’یہ ایک نہایت سخت اور لمبا میچ تھا۔ فیرر ایک عزیم کھلاڑی ہیں۔‘

میچ میں اینڈی مرے نے اٹھارہ ایس سروسز کرائیں جبکہ فیرر نے صرف آٹھ۔ فیرر کی تیز ترین سروس کی رفتار 122 میل فی گھنٹہ تھی جبکہ مرے کی سروس کی رفتار 135 میل فی گھنٹہ تھی۔

اسی بارے میں