فیلپس کا اعزاز، اولمپکس میں بائیس تمغے

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption مائیکل فیلپس کا یہ ریکارڈ توڑنا کسی کے لیے آسان نہیں ہو گا

امریکی تیراک مائیکل فیلپس نے لندن اولمپکس میں چار طلائی اور دو نقرئی تمغے جیت کر اولمپکس کھیلوں میں اپنے مجموعی تمغوں کی تعداد بائیس تک پہنچا دی ہے۔

انہوں نے ان مقابلوں میں اپنا آخری میڈل چار ضرب سو میڈلے میں حاصل کیا۔

لندن اولمپکس میں جب دو اگست کو انہوں نے دو سو میٹر انفرادی میڈلے میں اپنے ہم وطن رائن لاکتی کو شکست دے کر اولمپکس میں مجموعی طور پر بیسواں میڈل جیتا تو وہ ان کھیلوں کی تاریخ کے کامیاب ترین کھلاڑی بن گئے تھے۔

ستائیس سالہ مائیکل فیلپس کے چار اولمپکس مقابلوں میں جیتے گئے بائیس مجموعی میڈلز میں سے اٹھارہ طلائی تمغے ہیں اور وہ واحد مرد تیراک ہیں جنہوں نے اپنے ٹائٹل کا دو مرتبہ کامیابی سے دفاع کیا ہے۔

انہوں نے بیجنگ اور اینتھنز اولمپکس میں بھی طلائی تمغہ جیتا تھا۔ فیلپس نے لندن اولمپکس کے بعد ریٹائر ہونے کا اعلان کیا ہے۔

بی بی سی کے تجزیہ کار اور اولمپکس میں پانچ مرتبہ طلائی تمغہ حاصل کرنے والے این تھورہ نے مائیکل فیلپس کی کامیابی پر بات کرتے ہوئے کہا’ غیر معمولی، وہ دنیا کے پہلے مرد ہیں جنہوں نے اولمپکس میں اپنے اعزاز کا دو بار دفاع کیا‘

ان کا کہنا تھا کہ ’ایونٹ میں مسلسل تیسری بار طلائی تمغہ حاصل کرنا ناقابل یقین ہے۔مجھے خوشی ہوئی کہ انہوں نے اچھی تیراکی کی اور اب وہ کچھ دیر کے لیے آرام کر سکتے ہیں۔‘