سری لنکا کی نو وکٹوں سے جیت

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 29 ستمبر 2012 ,‭ 13:57 GMT 18:57 PST

سری لنکا میں جاری ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کے سپر ایٹ مرحلے میں ویسٹ انڈیز نے میزبان ٹیم سری لنکانے ویسٹ انڈیز کو نو وکٹوں سے شکست دے دی ہے۔

ویسٹ انڈیز نے سری لنکا کو جیتنے کے لیے 130 رنز کا ہدف دیا تھا۔ سری لنکا نے یہ ہدف پندرہ اعشاریہ دو اوورز میں حاصل کر لیا ہے۔

دونوں ٹیموں نے ایک ایک میچ جیت رکھا ہے جس کی وجہ سے ان کے سیمی فائنل میں رسائی کے امکانات برابر ہیں۔

کلِک میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

ویسٹ انڈیز نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔

سری لنکا کی اننگ کا آغاز مہیلا جیوردنے اور تلکرتنے دلشان نے کیا اور ویسٹ انڈیز کی جانب سے پہلا اوور روی رمپال نے کروایا۔

سری لنکا نے اپنی اننگ کا آغاز کافی جارحانہ انداز میں کیا اور پہلے ہی اوور میں ایک چوکے کے ساتھ چھ رنز بنائے۔

سری لنکا کو پہلا نقصان دلشان تلکرتنے کی وکٹ گرنے پر اٹھانا پڑا جب رمپال کی بال پر رامدن نے ان کا کیچ لیا۔

ویسٹ انڈیز کی جانب سے کرس گیل اور جانسن چارلس نے اوپننگ کی۔ میچ کے پانچویں اوور ہی میں ویسٹ انڈیز کو اس وقت نقصان اٹھانا پڑا جب اجانتھا مینڈس کی گیند پر جانسن سٹمپ ہو گئے۔

ویسٹ انڈیز کو بڑا نقصان چھٹے اوور میں اٹھانا پڑا جب کرس گیل نوان کلاسیکرا کی ہاتھوں آؤٹ ہو گئے۔

میچ کا پہلا چھکا ڈوائین براوو نے ہیراتھ کو دسویں اوور کی پہلی بال پر مارا۔

جیون مینڈس نے پندرہویں اوور کی تیسری بال پر براوو کو آؤٹ کیا۔ انہوں نے چالیس رنز بنائے۔

سولہویں اوور میں ویسٹ انڈیز کے پولرڈ مینڈس صرف ایک رن بنا کر آؤٹ ہوگئے۔

مارلن سیموئیل نے چونتیس بالوں پر چار چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے اپنی نصف سنچری مکمل کی۔ ان کو میتھیوز نے آؤٹ کیا۔

مارلن سیموئیل اینجلو میتھیو کے ہاتھوں بیسویں اوور کی دوسری بال پر دلشان کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

سری لنکا کی جانب سے اجانتھا مینڈس نے دو جبکہ میتھیوز، کلاسیکرا اور جیون مینڈس نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔