ٹی ٹوئنٹی: پاکستان کو آٹھ وکٹوں سے شکست

آخری وقت اشاعت:  اتوار 30 ستمبر 2012 ,‭ 14:27 GMT 19:27 PST

پاکستان کے پہلے آوٹ ہونے والے بلے باز عمران نذیر تھے

سری لنکا میں جاری ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کرکٹ مقابلوں کے سپرایٹ مرحلے کے میچ میں بھارت نے پاکستان کو آٹھ وکٹوں سے شکست دے دی ہے۔

کولمبو میں کھیلے جانے والے اس میچ میں ٹاس جیت کر پہلے کھیلتے ہوئے پاکستان کی ساری ٹیم 19.4 اوورز میں ایک سو اٹھائیس رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

جواب میں بھارت نے مطلوبہ ہدف دو وکٹوں کے نقصان پر سترہ اوورز میں حاصل کر لیا۔

کلِک میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

کلِک میچ تصاویر میں

پاکستان اس سے پہلے بھی بھارت کو کبھی ایک روزہ عالمی مقابلوں میں یا ٹی ٹوئنٹی کے عالمی ٹورنامنٹس میں شکست نہیں دے پایا۔

ویرات کوہلی دو چھکوں اور آٹھ چوکوں کی مدد سے 78 رنز بنا کر ناقابل شکست رہے اور میچ کے بہترین کھلاڑی ٹھہرے۔

بھارت کی جانب سے سہواگ اورگمبھیر نے اننگز کا آغاز کیا تاہم گمبھیر بغیر کوئی رنز بنائے رضا حسن کی گیند پر کیچ آؤٹ ہو گئے۔

جلدی نقصان کے بعد سہواگ اور کوہلی نے عمدہ کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے پچہتر رنز کی شراکت قائم کی۔

75 کے مجموعی سکور پر سہواگ انتیس رنز بنا کر شاہد آفریدی کی گیند پر کیچ آؤٹ ہو گئے۔

اس سے پہلے پاکستان کی جانب سے شعیب ملک اٹھائیس رنز بنا کر سب سے نمایاں بلے باز رہے۔

عمر اکمل نے اکیس رنز بنائے اور اس کے علاوہ آفریدی 14، عمران نذیر 8، ناصر جمشید4، کامران اکمل 5، اور کپتان محمد حفیظ 15 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

پاکستان کی جانب سے محمد حفیظ اور عمران نذیر نے اننگز کا آغاز کیا ہے اور دوسری اوور میں عمران نذیر ایل بی ڈبلیو ہو گئے۔

عمران نذیر نے دو چوکوں کی مدد سے پانچ گیندوں پر آٹھ رنز بنائے۔پاکستان نے بیٹنگ آڈر میں تبدیلی کرتے ہوئے شاہد آفریدی کو تیسری پوزیشن پر بھیجا تھا۔

دونوں ملکوں سے شائقین کی بڑی تعداد اپنے کرکٹرز کا حوصلہ بڑھانے کے لیے سٹیڈیم میں موجود ہے

بھارت کی جانب سے عرفان پٹھان نے ایک، بالاجی نے تین، ایشون اور یوراج سنگھ نے دو دو جبکہ کوہلی نے ایک وکٹ حاصل کی۔

یاد رہے کہ پاکستان کی ٹیم بھارت کو اس ٹورنامنٹ سے پہلے ہونے والے ایک وارم اپ میچ میں ہرا چکی ہے۔

لیکن پاکستان ماضی میں بھارت کو کبھی ایک روزہ عالمی مقابلوں میں یا ٹی ٹوئنٹی کے عالمی ٹورنامنٹوں میں شکست نہیں دے پایا ہے۔

پاکستان نے سپر ایٹ کے اپنے پہلے مقابلے میں دنیا کی مضبوط ترین ٹیموں میں سے ایک جنوبی افریقہ کو سنسنی خیر مقابلے کے بعد دو وکٹوں سے شکست دے دی تھی۔

بھارت کو آسٹریلیا کے ہاتھوں نو وکٹوں سے شکست اٹھانا پڑی تھی۔

پاکستان نے جنوبی افریقہ کے خلاف کھیلنے والی ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی جبکہ بھارت نے ٹیم میں دو تبدیلیاں کی تھی۔

بھارت نے ہربھجن سنگھ اور چاؤلہ کی جگہ سہواگ اور بالاجی کو ٹیم میں شامل کیا۔

پاکستان کی ٹیم: محمد حفیظ، عمران نذیر، ناصر جمشید، کامران اکمل، شعیب ملک، عمر اکمل، شاہد آفریدی، یاسر عرفات، رضا حسن، عمر گل اور سعید اجمل شامل ہیں۔

بھارت کی ٹیم: سہواگ، گمبھیر، رائنا، یوراج سنگھ، شرما، دھونی، عرفان پٹھان، ایشون، ظہیر خان اور بالاجی شامل ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔