خواتین ٹی ٹوئنٹی میں آسٹریلیا فاتح

آخری وقت اشاعت:  اتوار 7 اکتوبر 2012 ,‭ 13:38 GMT 18:38 PST
آسٹریلیا کی خواتین کرکٹ ٹیم

آسٹریلیا کی خواتین کرکٹ ٹیم نے عالمی ٹی ٹوئنٹی کپ جیت لیا ہے۔

آئی سی سی کے خواتین کے ٹی ٹوئنٹی عالمی کپ کے فائنل میں آسٹریلیا نے انگلینّ کو ہرا کر اس اعزاز کا دفاع کیا ہے۔

سری لنکا کے دارالحکومت کولمبو میں کھیلے گئے فائنل میں ایک زبردست مقابلے میں آسٹریلیا کی خواتین ٹیم نے انگلینڈ کی ٹیم کو چار رن سے شکست دے دی۔

اس سے قبل دو ہزار دس میں ویسٹ انڈیز میں کھیلے گئے عالمی کپ میں آسٹریلیا نے یہ مقابلہ جیتا تھا۔

واضح رہے کہ گزشتہ پچیس میچوں میں انگلینڈ کی یہ صرف دوسری شکست ہے۔

کلِک مکمل سکور کارڈ

انگلینڈ کی خواتین ٹیم کی کپتان شارلٹ ایڈورڈز نے ٹاس جیت کر آسٹریلیا کو بلے بازی کی دعوت دی اور آسٹریلیا نے مقررہ بیس اوروں میں چار وکٹوں کے نقصان پر ایک سو بیالیس رنز بنائے۔

آسٹریلیا کی جانب سے جیس کیمرن نے پانچ چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے پینتالیس رنز بنائے۔ انھیں اس عمدہ کارکردگی پر پلیئر آف دی میچ کا اعزاز دیا گیا۔

پلیئر آف دی ٹورنامنٹ کا اعزاز انگلینڈ کی کپتان شارلٹ ایڈورڈز کوملا۔

آسٹریلیا کے مجموعی سکور کے جواب میں انگلینڈ کی کپتان ایڈورڈز نے سب سے زیادہ اٹھائیس رنز بنائے اور ان کی ٹیم مقررہ بیس اوروں میں نو وکٹوں کے نقصان پر ایک سو اڑتیس رنز ہی بنا سکی۔

انگلینڈ کی کوئی بھی کھلاڑی لمبی اننگز نہ کھیل سکیں اور وقفے وقفے سے ان کے وکٹ گرتے رہے۔

آسٹریلیا کی جانب سے جیس جوناسن نے پچیس رنز کے عوض تین وکٹ لیے جبکہ لیزا ستھالیکر اور جولی ہنٹر نے دو دو وکٹ لیے۔

پورے ٹورنامنٹ میں اچھی کار کردگی کے باوجود انگلینڈ کی ٹیم اس میچ سے قبل زیادہ پر امید نظر نہیں آ رہی تھی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔