’بھارتی ٹی وی پر چلنے والی ویڈیو جعلی ہے‘

آخری وقت اشاعت:  منگل 9 اکتوبر 2012 ,‭ 17:40 GMT 22:40 PST
ندیم غوری

امپائروں ندیم غوری اور انیس صدیقی پر عائد کیے گئے میچ فکسنگ کے الزامات پر پاکستان کرکٹ بورڈ نے کہا کہ اس معاملے کا جائزہ لیا جا رہا ہے

بھارتی ٹی وی کی جانب سے جن چھ امپائروں پر میچ فکسنگ کے الزامات عائد کیے گئے ہیں ان میں دو پاکستانیوں میں سے ایک امپائر ندیم غوری نے ٹی وی پر اپنے بارے میں چلنے والی ویڈیو کو جعلی قرار دیا ہے۔

ندیم غوری کے مطابق یہ ایک سازش ہے اور اس کے پیچھے بھارت کی ایک مخصوص لابی کا ہاتھ ہے۔ واضح رہے کہ بھارت کے ایک ٹی وی چینل نے پیر کو نشر کیے گئے ایک پروگرام میں الزام لگایا تھا کہ ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کے آغاز سے پہلے چھ امپائر اس کے میچ فکس کرنے پر تیار تھے۔

بھارتی نجی ٹی وی کی جانب سے پاکستانی امپائروں ندیم غوری اور انیس صدیقی پر عائد کیے گئے میچ فکسنگ کے الزامات پر پاکستان کرکٹ بورڈ کے ترجمان ندیم سرور نے کہا کہ بورڈ اس معاملے کا جائزہ لے رہا ہے اور اس ضمن میں انٹرنیشنل کرکٹ کونسل سے رابطے میں ہے۔

ادھرانٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے میچ فکسنگ کے متعلق سامنے آنے والے نئے الزامات کی تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

آئی سی سی کا یہ بھی کہنا ہے کہ بھارتی ٹی وی کے پروگرام میں جن امپائروں کے نام لیے گئے ان میں سے کسی کی بھی خدمات ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کے لیے حاصل نہیں کی گئی تھیں۔

چینل نے الزام عائد کیا کہ ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کے آغاز سے پہلے چھ امپائر اس کے میچ فکس کرنے پر تیار تھے ان کا تعلق سری لنکا، پاکستان اور بنگلہ دیش سے تھا۔

آئی سی سی کے ایلیٹ پینل کے سابق ایپمائر ڈیرل ہیئر کا کہنا ہے کہ انہیں میچ آفیشل کے بارے میں ان الزامات پر کوئی حیرت نہیں ہوئی۔

ایک بھارتی اخبار کے مطابق ڈیرل ہیئر کے مطابق اس طرح کی افواہوں کا آغاز تو انڈین پریئمیر لیگ کے پہلے ایڈیشن پر ہی ہو گیا تھا۔

ہئیر نے کہا کہ انہیں تو یہ حیرانی ہے کہ اس سکینڈل کے سامنے آنے میں اتنی تاخیر کیوں ہوئی جبکہ کچھ امپائر بہت عرصے سے اس میں ملوث ہیں۔

جنوبی افریقہ میں آج سے چیمپئنز لیگ ٹی ٹوئنٹی کرکٹ ٹورنامنٹ کا آغاز ہو گیا ہے، نو سے گیارہ اکتوبر تک ٹورنامنٹ کا کوالیفائینگ راؤنڈ کھیلا جائے گا۔

پاکستان سے سیالکوٹ سٹالینز کی ٹیم بھی ٹورنامنٹ میں شریک ہے تاہم وہ پہلے کوالیفائی راؤنڈ کھیلے گی۔

سیالکوٹ سٹالینز کا پہلا میچ آک لینڈ سے ہو گا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔