بیوقوف پنجاب کی حکومت نے بنایا

آخری وقت اشاعت:  پير 22 اکتوبر 2012 ,‭ 19:12 GMT 00:12 PST

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین ذکا اشرف کا کہنا ہے کہ بنگلہ دیشی کرکٹ ٹیم کے پاکستان نہ آنے کی ذمہ دار پنجاب حکومت ہے بنگلہ دیش نہیں۔

انٹرنیشنل الیون اور پاکستان آل اسٹار الیون کے درمیان اتوار کے روز نیشنل اسٹیڈیم میں ہونے والے دوسرے ٹی ٹوئنٹی میچ کے موقع پر صحافیوں سے بات کرتے ہوئے ذکا اشرف نے کہا کہ یہ تاثر غلط ہے کہ بنگلہ دیشی کرکٹ بورڈ نے اپنی ٹیم پاکستان نہ بھیج کر انہیں بے وقوف بنایا درحقیقت بے وقوف پنجاب کی حکومت نے بنایا جس نے سکیورٹی کے بارے میں غیرذمہ دارانہ بیان دیا جس کے نتیجے میں بنگلہ دیشی کرکٹرز کے اہل خانہ خائف ہوگئے اور بنگلہ دیشی کورٹ سے دورے کے خلاف حکم امتناعی حاصل کرلیا گیا۔

ذکا اشرف نے کہا کہ قوم آئندہ سال تک پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کے سلسلے میں خوش خبری سنےگی اس سلسلے میں پاکستان کرکٹ بورڈ چند کرکٹ بورڈز سے رابطے میں ہے اور انہیں سکیورٹی پلان بھیجا جاچکا ہے جن میں بنگلہ دیش زمبابوے اور دو دیگر کرکٹ بورڈز شامل ہیں۔

ذکا اشرف نے کہا کہ انٹرنیشنل الیون کے ان دو میچوں کے سلسلے میں ڈاکٹرمحمد علی شاہ سے ہرممکن تعاون کیا گیا۔

مستقبل میں کسی ورلڈ الیون کو پاکستان بلانے کے بارے میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ ورلڈ الیون کا تعلق آئی سی سی سے ہوتا ہے جہانتک ایم سی سی کی ٹیم کے دورے کا تعلق ہے تو اس سلسلے میں ماجد خان سے بھی ان کی بات ہوئی ہے جن کے ایم سی سی سے اچھے تعلقات ہیں ۔

ذکا اشرف نے کہا کہ وہ پاکستان میں بین الاقوامی کرکٹ کی بحالی کے لئے تمام سابق کرکٹرز کو ساتھ لے کر چلنا چاہتے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔