آئی سی سی نے پھنسایا: محمد آصف

آخری وقت اشاعت:  پير 29 اکتوبر 2012 ,‭ 17:41 GMT 22:41 PST

میں نے ان تمام واقعات کے بارے میں ایک کتاب لکھی ہے جو جلد ہی منظر عام پر آ رہی ہے: محمد آصف

پاکستانی فاسٹ باؤلر محمد آصف نے کہا ہے کہ انہوں نے خود پر عائد کی جانے والی سات سالہ پابندی کے خلاف کورٹ آف آربیٹریشن ان سپورٹس میں اپیل دائر کر دی ہے۔

محمد آصف کے بقول اس اپیل کی سماعت ’فروری کے دوسرے یا تیسرے ہفتے میں ہو گی۔‘

آصف نے الزام لگایا کہ انہیں کرکٹ کے ادارے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے پھنسایا ہے۔ انھوں نے امید ظاہر کی کہ اس اپیل میں انھیں انصاف ملے گا اور ’سب کچھ ٹھیک ہو جائے گا کیونکہ اس میں صرف میں اور آئی سی سی ہی ہوں گے۔‘

محمد آصف برطانیہ کی ایک جیل میں سپاٹ فکسنگ کے جرم میں قید کی سزا کاٹنے کے بعد پاکستان پہنچے ہیں۔ محمد آصف کے علاوہ سابق کپتان سلمان بٹ اور فاسٹ باؤلر محمد عامر کو بھی اگست دو ہزار دس میں برطانیہ میں کھیلے جانے والے ایک ٹیسٹ میچ میں دانستہ نو بال کروانے کے جرم میں قید کی سزائیں دی گئی تھی۔

محمد آصف نے وطن واپسی پر لاہور میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ آئی سی سی نے ان کے خلاف جانبداری کا مظاہرہ کیا تھا، اور وہ اپنی اپیل میں اس بات کا ذکر کریں گے۔

محمد آصف نے اس موقعے پر یہ انکشاف کیا کہ انھوں نے ان تمام واقعات کے بارے میں ایک کتاب بھی لکھی ہے جو جلد ہی منظرِ عام پر آ رہی ہے۔ اس کتاب میں وہ تمام حقائق عوام کے سامنے لے کر آئیں گے۔

انتیس سالہ محمد آصف نے تئیس ٹیسٹ میچوں میں ایک سو چھ وکٹیں لی ہیں، اور وہ اپنی نپی تلی سوئنگ بولنگ کی وجہ سے فتح گر باؤلر مانے جاتے تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔