نیوزی لینڈ کی سری لنکا پر فتح

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 29 نومبر 2012 ,‭ 12:34 GMT 17:34 PST
نیوزی لینڈ

نیوزی لینڈ نے میچ جیت کر سیریز ایک ایک سے برابر کر لی۔

کولمبو میں کھیلے گئے دوسرے ٹیسٹ میچ میں جمعرات کو نیوزی لینڈ کی ٹیم نے میزبان سری لنکا کو شکست دے دی ہے۔

اس کے ساتھ ہی نیوزی لینڈ نے دو میچوں کی سیریز ایک- ایک سے برابر کر لی ہے۔ گزشتہ چودہ سال میں ٹیسٹ میچوں میں سری لنکا میں نیوزی لینڈ کی یہ پہلی جیت ہے۔

میچ میں عمدہ کارکردگی کی وجہ سے نیوزی لینڈ کے کپتان راس ٹیلر کو مین آف دی میچ دیا گیا جبکہ سیریز میں بہتر کار کردگی کے لیے رنگنا ہیرتھ کو مین آف دی سیریز قرار دیا گیا۔

کلِک سکور بورڈ دیکھنے کے لیے کلک کریں

اتوار کو شروع ہونے والے اس میچ میں نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کا فیصلہ کیا اور اپنی پہلی اننگز میں چار سو بارہ رنز بنائے۔

نیوزی لینڈ کی جانب سے اچھی شروعات نہیں ہوئی تھی اور ان کے دونوں اوپنرز چار چار رنز بناکر آؤٹ ہو گئے پھر کین ویلیم سن اور کپتان ٹیلر نے بہترین بلے بازی کی اور دونوں نے سنچری بنائی۔ ویلیم سن ایک سو پینتیس رنز بناکر آؤٹ ہوئے تو ٹیلر نے ایک سو بیالیس رنز بنائے۔

ڈینیئل فلن نے تریپن رنوں کی کارآمد اننگز کھیلی۔سری لنکا کی جانب سے ایک بار پھر ہیراتھ نے اچھی گیندبازی کی اور ایک سو تین رنز کے عوض چھ وکٹ لیے۔

جواب میں سری لنکا کی شروعات اچھی نہیں رہی اور ان کے چوٹی کے تین بلے باز دلشان تلک رتنے، مہیلا جے وردھنے اور کمارا سنگاکارا صرف بارہ رنوں کے مجمو‏عی سکور پر پویلین لوٹ چکے تھے۔

آل راؤنڈر اینجلو میتھیوز اور ٹی سمرویرا نے کسی حد تک لڑکھڑاتی اننگز کو سنبھالا اور دونوں نے بالترتیب سینتالیس اور چھہتر رنز بنائے۔ سری لنکا کی پوری ٹیم دو سو چوالیس رنز پر آؤٹ ہوگئی۔

راس ٹیلر

کپتان راس ٹیلر کو مین آف دی میچ دیا گیا۔

نیوزی لینڈ کی جانب سے ٹم ساؤدی نے باسٹھ رنز کے عوض پانچ وکٹ لیے تو دوسرے تیز گیند باز ٹرینٹ بولٹ نے بیالیس رنز کے عوض چار وکٹ لیے جبکہ ایک وکٹ جیتن پٹیل کے حصے میں آیا۔

نیوزی لینڈ نے پہلی اننگز میں ایک سو اڑسٹھ رنوں کی اہم سبقت حاصل کرلی اور پھر دوسری اننگز میں اس نے نو وکٹ کے نقصان پر ایک سو چورانوے رنز بناکر اننگز ختم کا اعلان کر دیا۔ اس طرح نیوزی لینڈ نے سری لنکا کے سامنے جیت کے لیے تین سو تریسٹھ رنزکا حدف رکھا جو کہ اس وکٹ پر خاصا مشکل تھا۔

نیوزی لینڈ کی جانب سے ایک بار پھر کپتان راس ٹیلر نمایا سکورر رہے۔ انھوں نے رن آؤٹ ہونے سے قبل چوہتّر رنز بنائے۔ سری لنکا کی جانب سے ہیراتھ نے تین، کولاشیکرا اور سورج رندیو نے دو دو وکٹ لیے۔

سری لنکا کی شروعات ایک بار پھر خراب رہی اور تریسٹھ رنوں پر اس کے پانچ اہم وکٹ گر چکے تھے۔ آخری دن انھیں جیت کے لیے ایک سو پچانوے رنوں کی ضرورت تھی اور صرف تین وکٹ باقی تھی۔

اینجلو میتھیوز کے ساتھ نیچے کے کھلاڑیوں نے کافی مزاحمت کی لیکن کامیابی نہ مل سکی اور پوری ٹیم ایک سو پچانوے رنز پر آؤٹ ہو گئی اس طرح میچ ایک سو آڑسٹھ رنوں سے ہار گئی۔

میتھیوز نے چوراسی رنز بنائے۔ نیوزی لینڈ کی جانب سے ساؤدی اور بولٹ نے تین تین وکٹ لیے جبکہ بریسویل نے دو اور آسٹن نے ایک وکٹ لیے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔