ناگ پور ٹیسٹ: ظہیر، یوراج اور ہربھجن ڈراپ

آخری وقت اشاعت:  پير 10 دسمبر 2012 ,‭ 22:12 GMT 03:12 PST

بھارت کو انگلینڈ کے خلاف ٹیسٹ سیریز برابر کرنے کے لیے ناگ پور ٹیسٹ جیتنے کی ضرورت ہے

بھارتی کرکٹ بورڈ نے انگلینڈ کے ہاتھوں کولکتہ ٹیسٹ میں شکست کے بعد ناگ پور ٹیسٹ کے لیے ٹیم میں تبدیلیوں کا اعلان کیا ہے۔

تیرہ دسمبر سے شروع ہونے والے ناگ پور ٹیسٹ کے لیے ظہیر خان، یوراج سنگھ اور ہربھجن سنگھ کو ٹیم سے ڈراپ کر دیا گیا ہے۔

بھارت کے کرکٹ بورڈ کے مطابق فاسٹ بالر پرویندر آوانا اور آل راؤنڈر رویندر جدیجا کو پہلی ٹیسٹ کال دی جائے گی جبکہ پیوش چاولا ہربھجن سنگھ کی جگہ لیں گے۔

دلی سے تعلق رکھنےوالے چھبیس سالہ فاسٹ بالر پرویندر آوانا نے چالیس فرسٹ کلاس میچوں میں ایک سو اکتیس وکٹیں حاصل کی ہیں جبکہ چوبیس سالہ آل راؤنڈر رویندر جدیجا نے اٹھاون ایک روزہ بین الاقوامی میچوں میں اٹھائیس رنز کی اوسط سے پانچ نصف سنچریاں بنانے کے علاوہ ستاون وکٹیں حاصل کی ہیں۔

دوسری جانب مشہور بھارتی بلے باز سچن تیندلکر ایک بار پھر ٹیسٹ سکواڈ میں اپنی جگہ بنانے میں کامیاب رہے ہیں۔

بھارت کو انگلینڈ کے خلاف ٹیسٹ سیریز برابر کرنے کے لیے ناگ پور ٹیسٹ جیتنے کی ضرورت ہے۔

ادھر بھارت کے کپتان مہندر سنگھ دھونی کو شدید دباؤ کا سامنا ہے۔ بھارتی اخبار ’ٹائمز آف انڈیا‘ نے دھونی کو ٹیم سے نکالنے کا مطالبہ کیا ہے۔ تاہم دھونی کا کہنا ہے کہ وہ بھارتی ٹیم کو آگے لے کر جائیں گے۔

"ہر کھلاڑی کو اپنی بہترین کارکردگی دکھانی اور ایک دوسرے کی حوصلہ افزائی کرنی ہو گی۔بھارتی بلے بازوں کو ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا ہو گا۔"

مہندر سنگھ دھونی

دھونی اس بات پر یقین نہیں رکھتے کہ بھارتی ٹیم ان کی کپتانی میں تاریخ کے سب سے برے دور سے گزر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ انہیں ٹیم کی جانب سے کی جانے والی غلطیوں کا علم ہے اور وہ ان غلطیوں کو دور کرنے کی کوشش کریں گے۔

بھارتی کپتان نے کہا ہر کھلاڑی کو اپنی بہترین کارکردگی دکھانی اور ایک دوسرے کی حوصلہ افزائی کرنی ہو گی۔

انہوں نے کہا بھارتی بلے بازوں کو ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا ہو گا، ہمارے بلے بازوں کو مزید رنز بنانے کی ضرورت ہے۔

کولکتہ میں کھیلے گئے تیسرے ٹیسٹ میچ میں انگلینڈ نے بھارت کو سات وکٹ سے شکست دے کر سیریز میں دو ایک کی سبقت حاصل کر لی ہے اور اگر انگلینڈ یہ سیریز جیت گیا توگزشتہ ستائیس سال کے بعد انگلینڈ کی بھارت میں پہلی ٹیسٹ سیریز فتح ہو گی۔

انگلینڈ کے خلاف ناگ پور ٹیسٹ ہارنے کی صورت میں بھارتی ٹیم کو اپنے ہوم گراؤنڈ میں سنہ انیس سو تراسی کے بعد پہلی بار مسلسل تیسرے ٹیسٹ میں ناکامی کا منہ دیکھنا پڑے گا۔

واضح رہے کہ ویسٹ انڈیز نے بھارتی ہوم گراؤنڈ میں سنہ انیس سو تراسی میں کھیلی جانے والی سیریز میں بھارت کو مسلسل تین ٹیسٹ میچوں میں شکست دے کر تین صفر سے ٹیسٹ سیریز جیتی تھی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔