ناگپور ٹیسٹ: انگلینڈ کو 165 رنز کی برتری

آخری وقت اشاعت:  اتوار 16 دسمبر 2012 ,‭ 09:15 GMT 14:15 PST

ناگپور میں جاری چوتھے اور آخری ٹیسٹ میچ میں بھارت نے نو وکٹوں کے نقصان پر تین سو چھبیس رنز بنا کر اپنی اننگز کے خاتمے کا اعلان کر دیا۔

اس کے بعد چوتھے دن کے کھیل کے اختتام پر انگلینڈ نے مجموعی طور پر ایک سو پینسٹھ رنز کی برتری حاصل کر لی تھی۔

اس سے پہلے کھانے کے وقفے سے پہلے بھارت کا سکور جب نو وکٹ کے نقصان پر تین سو چھبیس رنز تھا تو بھارتی کپتان مہندر سنگھ دھونی نے پہلی اننگز کے خاتمے کا اعلان کر دیا۔

اس طرح انگلینڈ کو پہلی اننگز کی بنیاد پر چار رنز کی معمولی سبقت حاصل ہو گئی تھی۔

جواب میں انگلینڈ نے اپنی دوسری اننگز میں چوتھے دن کے کھیل کے اختتام پر تین وکٹ کے نقصان پر ایک سو اکسٹھ رنز بنا لیے تھے۔ کھیل کے اختتام پر جوناتھن ٹراٹ چھیاسٹھ اور ایان بیل چوبیس رنز پر کریز پر موجود تھے۔

کلِک میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

اب صرف ایک دن کا کھیل باقی ہےاور بھارت میچ جیت کر سیریز برابر کرنے کی کوشش کرے گا جبکہ انگلینڈ بھی اسے برابر کر کے سیریز جیتنے کی کوشش کرے گا۔

انگلینڈ کی پہلی وکٹ کپتان الیسٹر کُک کی شکل میں گری جو کہ تیرہ رنز پر آؤٹ قرار دیے گئے حالانکہ ٹی وی ری پلے میں بعد میں دکھایا گیا کہ گیند ان کے بلے سے نہیں لگی تھی۔

بھارت کی جانب سے پہلا وکٹ ایشون نے لیا جبکہ دوسرا وکٹ پراگیان اوجھا کو ملا اور تیسرا وکٹ کیون پیٹرسن کی شکل میں گرا۔ ان کا وکٹ رویندر جڈیجا نے لیا۔

اس سے قبل جب بھارت نے اپنی اننگز ختم کرنے کا فیصلہ کیا تو بھارت کے رامچندر اشون انتیس اور ایشانت شرما دو رنز پر کھیل رہے تھے۔

واضح رہے کہ تیسرے دن کھیل کے اختتام پر بھارت نے انگلینڈ کے تین سو تیس رنز کے جواب میں آٹھ وکٹوں کے نقصان پر دو سو ستانوے رنز بنائے تھے۔

تیسرے دن بھارت نے محتاط انداز میں بلے بازی شروع کی تھی اور چائے کے وقفے تک انھوں نے کوئی وکٹ نہ گرنے دی اور اس دوران ویراٹ کوہلی نے اپنی سنچری مکمل کی۔ لیکن ان کے آؤٹ ہوتے ہی انگلینڈ نے یکے بعد دیگرے تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کر کے میچ میں واپسی کی۔

بھارت کے کپتان مہندر سنگھ دھونی صرف ایک رن سے اپنی سنچری مکمل کرنے سے چوک گئے۔ انھیں ننانوے رنز پر انگلینڈ کے کپتان کُک نے رن آؤٹ کر دیا۔ کوہلی کو ایک سو تین رنز پر گریم سوان نے ایل بی ڈبلیو کر دیا۔

انگلینڈ کی جانب سے جیمس اینڈرسن اور گریم سوان نے بالترتیب چار اور تین وکٹ لیے اور ایک وکٹ رن آؤٹ کی شکل میں گرا۔ جبکہ ایک وکٹ مونٹی پنیسر کو ملا۔

دوسرے دن کے کھیل کے اختتام پر بھارت نے چار وکٹوں کے نقصان پر ستاسی رنز بنائے تھے اور مہندر سنگھ دھونی اور ویرات کوہلی بالترتیب آٹھ اور گیارہ رنز پر بلے بازی کر رہے تھے۔

انگلینڈ کی طرح بھارت کا آغاز اچھا نہیں تھا اور صرف ایک رن کے مجموعی سکور پر گوتم گھمبیر بغیر کوئی سکور بنائے آؤٹ ہو گئے۔

بھارتی بلے باز انگلش بالروں کی عمدہ بالنگ کا سامنا کرنے میں ناکام رہے اور ان کی وکٹیں وقفے وقفے سے گرتی رہیں۔

جمعرات کو شروع ہونے والے میچ میں انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

چار ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں انگلینڈ کو بھارت کے خلاف دو ایک کی برتری حاصل ہے۔

احمدآباد میں کھیلا گيا پہلا میچ بھارت نے جبکہ ممبئی اور کولکتہ میں کھیلے جانے والے میچ انگلینڈ نے جیتے تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔