تندولکر کا ایک روزہ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان

آخری وقت اشاعت:  اتوار 23 دسمبر 2012 ,‭ 06:46 GMT 11:46 PST

تندولکر نے ایک روزہ کرکٹ میں انچاس سنچریاں اور چھیانوے نصف سنچریاں بنائیں۔

بھارت کے مایہ ناز بلے باز سچن تندولکر نے تیئس سال تک بھارت کی نمائندگی کرنے کے بعد ایک روزہ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کر دیا ہے۔

وہ پچیس دسمبر سے شروع ہونے والی پاک بھارت کرکٹ سیریز میں بھی حصہ نہیں لیں گے تاہم وہ بھارت کی جانب سے ٹیسٹ کرکٹ کھیلتے رہیں گے۔

بھارتی کرکٹ بورڈ نے تصدیق کی ہے کہ انہیں سچن کی جانب سے اس فیصلے کے بارے میں مطلع کیا گیا ہے۔

بی سی سی آئی کے سیکریٹری سنجے جگدالے کے مطابق بی سی سی آئی کو بھیجے گئے پیغام میں سچن تندولکر نے کہا ہے کہ ’میں نے ایک روزہ طرز کی کرکٹ سے ریٹائر ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ میں خود کو خوش قسمت سمجھتا ہوں کہ میرا ورلڈ کپ جیتنے والی بھارتی ٹیم کا رکن ہونے کا خواب پورا ہو سکا۔‘

ان کا کہنا تھا کہ وہ اپنے مداحوں کے شکرگزار ہیں کہ انہوں نے طویل عرصے تک ان کی غیر مشروط طور پر حمایت کی اور انہیں پیار دیا۔

سچن کو ایک روزہ کرکٹ کی تاریخ کی واحد ڈبل سنچری بنانے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔

انہوں نے کہا کہ دو ہزار پندرہ کے ورلڈ کپ میں اعزاز کے دفاع کی تیاری جلد شروع ہو جانی چاہیے اور وہ بھارتی ٹیم کے مستقبل کے لیے نیک خواہشات رکھتے ہیں۔

انیس سو نواسی میں اپنے کیرئر کا آغاز کرنے والے سچن تندولکر نے اپنے تیئیس سالہ کیریئر میں چار سو تریسٹھ ون ڈے میچ کھیلے جن کی چار سو باون اننگز میں انہوں نے تقریباً پینتالیس کی اوسط سے اٹھارہ ہزار چار سو باسٹھ رنز بنائے۔

تندولکر نے ایک روزہ کرکٹ میں انچاس سنچریاں اور چھیانوے نصف سنچریاں بنائیں۔

وہ ایک روزہ کرکٹ میں سب سے زیادہ رنز بنانے والے بلے باز ہیں اور انہیں ایک روزہ کرکٹ کی تاریخ کی واحد ڈبل سنچری بنانے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔

تندولکر کی ریٹائرمنٹ پر ایک بھارتی ٹی وی چینل سے بات چیت کرتے ہوئے سابق سلیکٹر سری کانت نے کہا ہے کہ وہ اس خبر سے حیران ہیں لیکن سچن اپنے کیریئر کے عروج پر ریٹائر ہو رہے ہیں جو کہ اپنے آپ میں ایک کامیابی ہے۔

اسی بارے میں

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔