سنسنی خیز مقابلےکے بعد انگلینڈ کی فتح

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 11 جنوری 2013 ,‭ 10:01 GMT 15:01 PST

بھارتی نژاد انگلش کھلاڑی سمت پیٹل کی عمدہ اننگز نے انگلینڈ کی جیت میں اہم کردار ادا کیا

راج کوٹ میں کھیلے جانے والے پہلے ون ڈے میچ میں انگلینڈ نے ایک سنسی خیز مقابلے کے بعد انڈیا کو نو رنز سے شکست دے دی ہے۔

انگلینڈ نے پہلے کھیلتے ہوئے انڈیا کو جیتنے کے لیےتین سو چھبیس رنز کا ہدف دیا۔ انڈیا نے جواب میں پچاس اوروں میں نو وکٹوں کے نقصان پر تین سو سولہ رنز بنائے۔

بھارت کی جانب سے یوراج سنگھ نے سب سے زیادہ اکسٹھ رنز بنائے۔

کلِک تفصیلی سکور کارڈ

بھارت کے ابتدائی بلے بازوں نے اننگز کا آغاز انتہائی عمدہ انداز میں کیا۔ انڈیا کی پہلی وکٹ چھیانوے رنز کے سکور پرگری جب اوپنر ریحانے آؤٹ ہوئے۔ بھارت کے دوسرے اوپنر گوتھم گھمبیر بھی زیادہ دیر تک وکٹ پر نہ جم سکے اور بھارت کی دوسری وکٹ 102 کے مجموعی سکور پر گر گئی۔

اس کے بعد یوراج سنگھ اور ویرات کوہلی نے مل کر کی انڈیا کی اننگز کو سہارا دینے کی کوشش کی۔ ویرات کوہلی صرف پندرہ رنز بنا کر ٹم برسنن کی گیند پر وکٹ کیپر کے ہاتھوں آؤٹ ہوگئے۔

یوراج سنگھ اور سریش رائنا نے شاندار بیٹنگ کرتے ہوئے ٹیم کا سکور ایک سو اٹھانوے رنز پر پہنچا دیا۔ یوراج سنگھ آؤٹ آؤٹ ہونے والے چوتھے کھلاڑی تھے۔یوراج سنگھ کے آؤٹ ہونے کے بعد انڈیا کی وقفے سے وکٹیں گرتی رہیں۔ کپتان مہندر سنگھ دھونی نے ایک بار پھر انڈیا کو جیت کی امید دلا دی لیکن ان کے آؤٹ ہوتے ہوئے انگلینڈ کی فتح یقینی ہوگئی۔

اس سے پہلےانگلینڈ نے پہلے کھیلتے ہوئے اوپنرز کی ایک سو اٹھاون رنز کی شاندار شراکت کی بدولت مقررہ پچاس اوورز میں چار وکٹوں کے نقصان پر 325 رنز بنائے۔

انگلش اوپنر اور کپتان الیسٹر کک نے پچھہتر اور ان کے ساتھی ایئن بیل نے پچاسی رنز کی اننگز کھیلیں۔

ان کے بعد کیون پیٹرسن کے چوالیس اور اوئن مورگن کے اکتالیس رنز اور آخر میں سمت پٹیل کی جارحانہ اننگز کی بدولت انگلش ٹیم ایک بڑے سکور تک پہنچنے میں کامیاب رہی۔

پٹیل نے چھ چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے بیس گیندوں پر چالیس رنز بنائے۔

بھارت کی جانب سے اشوک ڈنڈا نے دو جبکہ سریش رائنا نے ایک وکٹ حاصل کی جبکہ ایک کھلاڑی رن آؤٹ ہوا۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔