آرمسٹرونگ اعتراف کے بعد معافی کے خواستگار

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 18 جنوری 2013 ,‭ 04:05 GMT 09:05 PST
لانس آرمسٹرونگ

ماضی میں لانس آرمسٹرانگ نے ڈوپنگ کے الزامات کو ہمیشہ غلط قرار دیا تھا

امریکی سائیکلسٹ لانس آرمسٹرونگ نے پہلی بار عوامی سطح پر ممنوعہ قوت بخش ادویات کے استعمال کا اعتراف کیا ہے۔

انہوں نے ٹور ڈی فرانس سائیکل ریس میں اپنی سات فتوحات کو انہیں ادویات کا مرہونِ منت قرار دیا اور کہا کہ ان کے بغیر وہ یہ کامیابیاں حاصل نہیں کر سکتے تھے۔

ممنوعہ ادویات کے استعمال کے الزام پر اکتالیس سالہ آرمسٹرونگ سے ان سے تمام اعزازات واپس لے لیے گئے ہیں۔

امریکی ٹی وی کے مقبول پروگرام اوپرا ونفری شو میں انٹرویو دیتے ہوئے امریکی سائیکلسٹ کا کہنا تھا کہ ’یہ سب کچھ ایک بہت بڑا جھوٹ تھا جو میں نے بار بار بولا۔‘

انہوں نے خود کو خامیوں سے بھرپور شخصیت قرار دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ’وہ فیصلے میں نے خود کیے۔ وہ میری غلطیاں ہیں اور میں ان پر معذرت خواہ ہوں۔‘

یہ کہا جا رہا ہے کہ وہ ایتھلیٹکس میں دوبار واپس آنا چاہتے ہیں اور اسی لیے انہوں نے اعترافِ جرم کیا ہے۔

یاد رہے کہ کارکردگی بڑھانے والی ادویات کی روک تھام کے عالمی ادارے کے قوانین میں یہ گنجائش موجود ہے کہ اگر ملزم کھلاڑی ادویات کے استعمال کا اعتراف کر لے تو مخصوص حالات میں اس کھلاڑی پر لگائی گئی پابندیاں نرم کی جا سکتی ہیں۔

"یہ سب کچھ ایک بہت بڑا جھوٹ تھا جو میں نے بار بار بولا۔۔۔وہ فیصلے میں نے خود کیے۔ وہ میری غلطیاں ہیں اور میں ان پر معذرت خواہ ہوں۔"

لانس آرمسٹرونگ

ماضی میں لانس آرمسٹرانگ نے ڈوپنگ کے الزامات کو ہمیشہ غلط قرار دیا لیکن انہوں نے خود پر امریکہ میں کارکردگی بڑھانے والی ادویات کی روک تھام کے ادارے یوساڈا کی جانب سے لگائے جانے والے الزامات پر جرح بھی نہیں کی جبکہ ان کے وکیل نے اس رپورٹ کو یکطرفہ قرار دیا تھا۔

خیال رہے کہ یوساڈا نے آرمسٹرونگ اور ان کی ٹیم پر الزام عائد کیا تھا کہ انہوں نے ڈوپنگ کا ایسا ’جدید، پیشہ ورانہ اور کامیاب‘ طریقہ اپنایا، جو اب تک کھیل کی دنیا میں دیکھنے کو نہیں ملا ہے۔

اس کے بعد یوساڈا نے آرمسٹرونگ کا معاملہ انٹرنیشنل سائیکلنگ یونین (یو آئی سی) کو بھجوایا تھا۔

جس پر انٹرنیشنل سائیکلنگ یونین (یو آئی سی) نے امریکہ میں کارکردگی بڑھانے والی ادویات کی روک تھام کے ادارے یوساڈا کی رپورٹ کو تسلیم کرتے ہوئے کارروائی کی اور لانس آرمسٹرانگ سے ٹور ڈی فرانس ریس کے سات ٹائٹلز سمیت تمام اعزازات واپس لینے کا اعلان کیا۔

لانس آرمسٹرونگ نےاس فیصلے کے خلاف اپیل بھی نہیں کی تھی اور حال ہی میں انہوں نے اپنے ادارے ’لیو سٹرونگ فاؤنڈیشن‘ کے عملے سے معذرت بھی کی ہے۔

فاؤنڈیشن کے ایک ترجمان کے مطابق ریاست ٹیکساس کے شہر آسٹن میں نجی بات چيت کے دوران انہوں نے بذات خود معذرت پیش کی

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔