’پی ایس ایل میں مکمل سکیورٹی فراہم کی جائے گی‘

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 24 جنوری 2013 ,‭ 21:58 GMT 02:58 PST

’مکمل سکیورٹی فراہم کی جائے گی‘

’مکمل سکیورٹی فراہم کی جائے گی‘

دیکھئیےmp4

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

متبادل میڈیا پلیئر چلائیں

پاکستان کرکٹ بورڈ نے اعلان کیا ہے کہ پاکستان سپر لیگ میں شرکت کرنے والے غیر ملکی کھلاڑیوں کو بیس بیس لاکھ ڈالر کا انشونش کور حاصل ہو گا۔

کرکٹ بورڈ کے چئیرمین ذکا اشرف نے بی بی سی کو بتایا کہ ڈائنمنڈ اور گولڈن گیٹگری میں شامل غیر ملکی کھلاڑیوں کی انشورنس اس لیے کی جا رہی ہے تاکہ ان کھلاڑیوں کے اہلخانہ کو تحفظ کا احساس ہو۔

اس سے پہلے بدھ کو پاکستان کی پہلی ٹی ٹونٹی لیگ پاکستان سپر لیگ کی انتظامیہ نے غیر ملکی کھلاڑیوں کو یقین دہانی کروائی ہے کہ انہیں پاکستان میں مکمل سکیورٹی فراہم کی جائے گی۔

یہ یقین دہانی اس لیگ کے مینجنگ ڈائریکٹر سلمان سرور بٹ اور پاکستان سپر لیگ کے مشیر اور آئی سی سی کے سابق چیف ایگزیکٹو ہارون لورگاٹ نے ایک پریس کانفرنس میں کی۔

اس یقین دہانی کی ضرورت اس لیے محسوس کی گئی کہ کرکٹرز کی عالمی تنظیم فیکا نے پاکستان میں سکیورٹی کی صورتحال کے سبب دنیا کے کرکٹرز کو یہ مشورہ دیا ہے کہ وہ پاکستان میں پہلی ٹی ٹونٹی کرکٹ لیگ پاکستان سپر لیگ میں شرکت نہ کریں۔

پاکستان سپر لیگ ٹی ٹونٹی ٹورنامنٹ کی انتظامیہ نے اس پریس کانفرنس میں پی ایس ایل میں کھلاڑیوں کی کیٹگریز کا اعلان بھی کیا ڈائمنڈ کیٹگری کے کرکٹر کو ایک لاکھ امریکی ڈالرز ملیں گے۔

پلاٹینم کیٹگری والوں کے لیے 75 ہزار ڈالرز گولڈ کیٹگری والوں کو 50 ہزار اور سلور کیٹگری والوں کو 25 ہزار ڈالرز ملیں گے۔ ایک کیٹگری ابھرتے ہوئے کھلاڑیوں کے لیے ہے جنہیں پانچ سے دس ہزار امریکی ڈالرز ملیں گے۔

ہارون لورگاٹ نے کہا کہ یہ بیان پی ایس ایل کے خلاف نہیں بلکہ پاکستان میں سکیورٹی کی صورتحال کے بارے میں ہے اور ان کے بیان سے متفق نہیں ہونا چاہیے۔

"پاکستان سپر لیگ کے مینجنگ ڈائریکٹر سلمان سرور بٹ نے دعویٰ کیا کہ انہوں نے دنیا کے بہت سے کھلاڑیوں سے رابطہ کیاہے۔ وہ پی ایس ایل میں شرکت کے لیےان سے اس پر بات چیت کر رہے زیادہ تر کھلاڑیوں کی جانب سے جو رد عمل آیا ہے وہ بہت حوصلہ افزا ہے۔ لیکن وہ ایک خاص وقت میں ہی ان کے ناموں کا اعلان کریں گے۔ اس لیگ کے وینیو کا اعلان کب کیا جائے گا اس کی بابت سرور بٹ نے کہا کہ وہ وینیو کا بھی جلد فیصلہ کریں گے اور اس کا اعلان کر دیا جائے گا۔"

مناء رانا

بی بی سی اردو ڈاٹ کام، لاہور

ہارون لورگاٹ نے کہا کہ زمینی حقیقت یہ ہے کہ وہ ایک دو ماہ میں یہ ان کا لاہور کا چوتھا دورہ ہے وہ لاہور میں صورتحال کو بہت بہتر سمجھتے ہیں اور صورتحال اس سے کافی مختلف ہے جیسی سمجھی جاتی ہے۔

فیکا کے بیان پر تبصرہ کرتے ہوئے ہارون لورگاٹ نے کہا کہ یہ بیان افسوسناک ہے اور ان کھلاڑیوں پر اثر ڈال سکتا ہے جنہوں نے ابھی فیصلہ نہیں کیا۔

’ایسے بیان کا اثر منفی ہو سکتا ہے اور یہ اس لیگ کی تیاریوں کے لیے اور کچھ کھلاڑیوں کے اعتماد کو بحال کرنے کے لیے ساز گار نہیں ہو گا۔‘

ان کا کہنا تھا کہ دوسری جانب خوش قسمتی سے ایسے بہت سے کھلاڑی جو اس میں شرکت کا فیصلہ کر چکے ہیں اور وہ صورتحال کو سمجھتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وہ پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے دی گئی یقین دہانی پر اعتماد کرتے ہیں اور یہ بات بھی مدد گار ہو گی کہ آئی سی سی کے چیف ایگزیکٹو ڈیو رچرڈسن یہاں آ کر خود جائزہ لے چکے ہیں۔

’اور جو بات فیکا نے کہی ہے پاکستان کرکٹ بورڈ کو اس کے مقابلے میں تصویر کا دوسرا رخ دکھانا چاہیے اور کسی غیر جانبدار سکیورٹی ایجنسی کی خدمات حاصل کرنی چاہیں۔‘

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔