سرینا سب سے زیادہ عمر والی عالمی نمبر1

آخری وقت اشاعت:  منگل 19 فروری 2013 ,‭ 01:39 GMT 06:39 PST

ٹینس کھلاڑی سرینا ولیمز دنیا کی پہلی سب سے زیادہ عمر والی عالمی نمبر ایک کھلاڑی بن گئ ہیں

ٹینس کھلاڑی سرینا ولیمز نے دنیا کی سب سے زیادہ عمر والی عالمی نمبر ایک کھلاڑی بننے کا اعزاز حاصل کر لیا ہے۔

اس وقت ان کی عمر اکتیس سال اور ایک سو پینتالیس دن ہے اور انہوں نے وکٹوریا آزارنکا کو وویمن ٹینس ایسوسی ایشن یا ڈبلیو ٹی اے کی رینکنگ میں پیچھے چھوڑ کر عالمی نمبر ایک کا درجہ حاصل کر لیا ہے۔

سب سے زیادہ عمر والی نمبر ایک کا سابقہ ریکارڈ بھی سرینا کی ہم وطن کرس ایورٹ کا ہے جنہوں نے انیس سو پچاسی میں اکتیس سال کی عمر سے پہلے یہ سب سے زیادہ عمر والی عالمی نمبر ایک کا درجہ حاصل کیا تھا۔

پندرہ گرینڈ سلیم جیتنے والی سرینا نے عالمی نمبر ایک کا درجہ اس سے قبل اکتوبر دو ہزار دس کو حاصل کیا تھا جس کے بعد ان کے پاؤں میں چوٹ آئی تھی۔

سرینا کا دایاں پاؤں ٹوٹے ہوئے شیشے کی وجہ سے کٹ گیا تھا جس کے علاج کے لیے ان کے دو آپریشن کیے گئے جس کے بعد ان کے پھیپھڑوں میں خون کی گلٹیاں بھی بن گئی تھیں۔

سرینا کو اس پاؤں کی چوٹ کی وجہ سے عالمی اے ٹی پی ٹور تقریباً سے ایک سال کے لیے دور رہنا پڑا تھا۔

اس دوران سرینا عالمی درجہ بندی میں ایک سو پچھترویں درجے تک گر گئی تھیں مگر دو ہزار بارہ میں انہوں نے اوپر واپسی کا سفر دوبارہ شروع کیا۔ اس کے بعد انہوں نے ومبلڈن جیتا، پھر اولمپکس کا سنگل فائنل جیتا، پھر یو ایس اوپن جیتا اور بالاخر ورلڈ ٹینس ایسوسی ایشن کی چیمپئن شپ کا ٹائٹل جیتا۔

جس وقت انہوں نے قطر اوپن کے سیمی فائنل کے لیے کوالیفائی کیا تو ان کے پاس اتنے پوائنٹس آ چکے تھے کہ وہ عالمی نمبر ایک کی درجہ بندی حاصل کر سکیں۔

سرینا کے کوچ پیٹرک موراٹوگلو کا کہنا تھا کہ سرینا اس سے آگے جا کر مارٹینا نیوراٹیلووا اور کرس ایورٹ کے برار پہنچ سکتی ہیں جن سونوں نے اٹھارہ گرینڈ سلیم مقابلے جیت رکھے ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔