پہلے مصباح کا متبادل تو لاؤ: وقار

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 8 مارچ 2013 ,‭ 12:32 GMT 17:32 PST
وقار یونس

موجودہ حالات میں کوئی بھی ایسا کرکٹر نہیں ہے جو مصباح الحق کی جگہ لے سکے: وقار

سابق فاسٹ بولر وقاریونس کا کہنا ہے کہ مصباح الحق کو قیادت سے ہٹانے سے پہلے ان کا درست متبادل تلاش کرنا بہت ضروری ہے۔

وقاریونس نے سڈنی سے بی بی سی کو دیے گئے انٹرویو میں کہا کہ ساری زندگی کسی نے کرکٹ نہیں کھیلنی۔ یقیناً مصباح الحق اسوقت عمر کے جس حصے میں ہیں اس میں وہ وقت آگیا ہے کہ کوئی ان کی جگہ لے سکے لیکن موجودہ حالات میں کوئی بھی ایسا کرکٹر انہیں نظر نہیں آرہا جو ان کی جگہ قیادت کی ذمہ داری سنبھال سکے۔

وقاریونس نے کہا کہ ایک صورت تو یہ ہے کہ آپ دوبارہ پیچھے کی طرف چلے جائیں اور یونس خان کو ایک دو سال کے لیے دوبارہ قیادت کی ذمہ داری سونپ دیں یا پھر کسی نوجوان کو کپتان بنائیں لیکن خطرہ یہ ہے کہ کسی نوجوان کو کپتان بنانے سے کئی مسائل کھڑے ہوجائیں گے۔

مصباح الحق

مصباح الحق کی فارم پر کافی سوالات اٹھائے جا رہے ہیں

وقاریونس محمد حفیظ کو ٹیسٹ ٹیم کا کپتان بنانے کے قطعاً حق میں نہیں ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ جنوبی افریقہ کےخلاف ٹیسٹ سیریز میں حفیظ کی کارکردگی بہت ہی مایوس کن رہی اور اس کارکردگی کے ساتھ وہ ٹیم کی کپتانی کیسے سنبھال سکتے ہیں۔

وقاریونس نے کوچ ڈیوواٹمور کی کارکردگی پر بھی سخت مایوسی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ یہ انتہائی شرمناک بات تھی کہ ٹی ٹوئنٹی میں جب حفیظ آؤٹ ہوکر آرہے تھے تو کامران اکمل اور شاہد آفریدی کی آوازیں آرہی تھیں کہ اب کون بیٹنگ کے لیے جائے گا۔ جب کپتان بیٹنگ کر رہا ہو تو یہ کوچ کی ذمہ داری ہوتی ہے کہ وہ بیٹنگ آڈر کو صورتحال کے مطابق ترتیب دے۔

وقاریونس نے کہا کہ ٹیسٹ سیریز میں پاکستانی ٹیم نے منفی کرکٹ کھیلی اور غیرضروری طور پر دفاعی انداز اختیار کئے رکھا۔ایسا دکھائی دے رہا تھا جیسے ٹیم نے پہلے ہی ذہنی طور پر ہار تسلیم کرلی ہو۔

وقار یونس نے کہا کہ انہیں حیرت ہے کہ بیٹسمینوں نے سٹرائیک ریٹ کو کبھی تیز نہیں ہونے دیا اور گیندوں کو روکتے رہے افسوس کی بات یہ ہے کہ یہ منفی پیغام نوجوان کھلاڑیوں کو بھی دیا جا رہا ہے۔ٹیسٹ کرکٹ صرف روکنے کا نام نہیں ہے جیتنے کے لیے سکور بھی ضروری ہوتا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔