آفریدی کی اننگز رائیگاں، پاکستان کو شکست

آخری وقت اشاعت:  اتوار 17 مارچ 2013 ,‭ 16:24 GMT 21:24 PST

شاہد آفریدی نے نے7 چھکوں اور 5 چوکوں کی مدد سے 48 گیندوں پر 88 رنز کی اہم اننگز کھیلی

جنوبی افریقہ نے تیسرے ایک روزہ کرکٹ میچ میں پاکستان کو 34 رنز سے شکست دے کر سیریز میں دو ایک سے برتری حاصل کر لی ہے۔

جوہانسبرگ میں کھیلے گئے میچ میں پاکستان نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا جو ایک مرتبہ پھر صحیح ثابت نہیں ہو سکا اور جنوبی افریقہ نے ہاشم آملہ اور ابراہم ڈی ویلیئرز کی سنچریوں کی بدولت پاکستان کو فتح کے لیے 344 رنز کا ہدف فراہم کیا۔

اس کے جواب میں پاکستانی ٹیم انچاسویں اوور میں 309 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

پاکستانی اننگز کی خاص بات ایک عرصے سے آؤٹ آف فارم شاہد آفریدی کی دھواں دھار بلے بازی تھی۔ انہوں نے7 چھکوں اور 5 چوکوں کی مدد سے 48 گیندوں پر 88 رنز کی اہم اننگز کھیلی۔

اس اننگز کے دوران انہیں ایک موقع بھی ملا جب وہ نو بال پر بولڈ ہوئے۔ آفریدی کے علاوہ محمد حفیظ نے بھی عمدہ بلے بازی کی اور نصف سنچری بنائی۔

اس کے علاوہ وہاب ریاض نے میچ کے اختتامی اوورز میں پینتالیس رنز کی اہم اننگز کھیلی لیکن وہ ٹیم کو اس بڑے ہدف تک پہنچانے میں ناکام رہے۔

جنوبی افریقہ کی جانب سے میکلارن اور سوٹسوبے تین، تین وکٹیں لے کر سب سے کامیاب بولر رہے۔

اس سے قبل جنوبی افریقی اننگز کے دوران پاکستانی بولر ابتدا میں جنوبی افریقہ کے کپتان گریم سمتھ اور کولن انگرم کی وکٹیں لینے میں تو کامیاب رہے لیکن اس کے بعد ہاشم آملہ نے ابراہم ڈیویلیئرز کے ساتھ مل کر تیسری وکٹ کے لیے 238 رنز کی شراکت قائم کر کے ایک بڑے سکور کی بنیاد رکھی۔

اس دوران ان دونوں بلے بازوں نے سنچریاں بھی بنائیں۔ آملہ ایک روزہ کرکٹ میں اپنی گیارہویں سنچری بھی مکمل کرنے کے بعد 122 کے انفرادی سکور پر وہاب ریاض کی گیند پر کیچ ہوئے۔

ڈی ویلیئرز 128 رنز کے ساتھ ٹاپ سکورر ہے۔ انہیں سعید اجمل کی گیند پر شعیب ملک نے کیچ کیا۔

اختتامی اوورز میں فاف ڈو پلیسی کی اٹھارہ گیندوں پر پینتالیس رنز بنا کر ٹیم کا سکور پانچ وکٹوں کے نقصان پر 343 تک پہنچانے میں اہم کردار ادا کیا۔

پاکستان کی جانب سے محمد عرفان اور وہاب ریاض نے دو، دو وکٹیں حاصل کیں۔

پانچ میچوں کی یہ سیریز اس میچ سے قبل ایک ایک سے برابر ہے۔

دس مارچ کو کھیلے جانے والے پہلے ایک روزہ میچ میں جنوبی افریقہ نے پاکستان کو 125 رنز سے شکست دی تھی جبکہ دوسرا میچ پاکستان نے چھ وکٹوں سے جیتا تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔