بھارت آسٹریلیا سیریز میں کئی ریکارڈز بنے

آخری وقت اشاعت:  پير 25 مارچ 2013 ,‭ 17:03 GMT 22:03 PST
بھارتی ٹیسٹ کرکٹ ٹیم

بھارت نے فیروز شاہ کوٹلہ میں میچ جیت کر تاریخ رقم کی ہے

بھارت کے دارالحکومت دلّی کے فیروز شاہ کوٹلہ میدان پر جب بھارت نے آسٹریلیا کو شکست دی تو سب کی زبان پر ایک لفظ تھا، تاریخی جیت۔ کیا آپ جانتے ہیں کہ یہ جیت تاریخی کیوں ہے؟ پیش ہیں وہ سب ریکارڈ جو اس شاندار جیت کے نتیجے میں بنے۔

1۔ یہ پہلا موقع تھا جب بھارت نے صفر کے مقابلے چار میچ سے کسی ٹیسٹ سیریز میں کامیابی حاصل کی ہے۔ اس سے قبل وہ تین بار ٹیسٹ سیریز میں صفر کے مقابلے تین میچ جیت چکے ہیں۔

2۔ بھارت نے فیروز شاہ کوٹلہ میدان میں کھیلے جانے والے گزشتہ 10 میچوں میں سے نو میں کامیابی حاصل کی ہے، ایک میچ ڈرا رہا۔

3۔ فیروز شاہ کوٹلہ میدان میں بھارت کل 12 ٹیسٹ جیت چکا ہے۔ بھارت کو اس سے زیادہ 13 ٹیسٹ میچوں میں جیت صرف چنّئی کے ایم اے چدامبرم اسٹیڈیم میں ملی ہے۔

4۔ سنہ 1970 - 1969 میں جنوبی افریقہ سے چار صفر سے ہارنے کے بعد آسٹریلیا پہلی بار کسی ملک سے پھر چار صفر سے ٹیسٹ سیریز میں ہارا ہے۔

5۔ آسٹریلیا بھارت کی سرزمین پر لگاتار سات ٹیسٹ میچ ہار چکا ہے، کسی ملک کے خلاف یہ ان کا سب سےخراب کارکردگی ہے۔

6۔ ٹیسٹ کرکٹ کی تاریخ میں صرف دوسری بار ایسا ہوا جب ایک ٹیم نے چار یا اس سے زیادہ مرتبہ ٹاس جیتا اور چار یا اس سے زیادہ میچ ہارے۔

7۔ 1929 میں پرسي ہارني بروك کے بعد گلین میكسول ایک ٹیسٹ میں بلے بازی اور گیند بازی دونوں کی اوپننگ کرنے والے پہلے آسٹریلین بنے۔

8۔ ٹیسٹ کرکٹ کے اپنی تاریخ میں آسٹریلیا نے صرف تیسری بار اتوار کو اپنی دوسری اننگز کا آغاز دو اسپنروں کے ساتھ کیا۔

9. بھارتی بلے باز شکھر دھون اپنے پہلے ہی ٹیسٹ میں سب سے تیز سنچری بنانے والے دنیا کے پہلے بلے باز بنے۔

10. سنہ 2001 میں آسٹریلیا کے خلاف ہربھجن سنگھ کے 32 وکٹ لینے کے بعد اس ٹیسٹ سیریز میں 29 وکٹ لینےوالے آر اشون کی کارکردگی سب سے بہتر رہی۔ ٹیسٹ میچوں میں بھارت کی جانب سےیہ ساتویں سب سے اچھی کارکردگی ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔