نو بال کے نئے قانون کا اطلاق تیس اپریل سے

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے اعلان کیا ہے کہ تیس اپریل سے اگر کوئی بالر گیند کرواتے وقت نان سٹرائیک اینڈ سے ٹکرا جائے تو امپائرز ایسی بال کو ’نو بال‘ قراد دیں گے۔

میریلبون کرکٹ کلب کا کہنا ہے کہ رواں برس یکم اکتوبر سے یہ باقاعدہ قانون بنے گا لیکن آئی سی سی نے تیس اپریل سے کرکٹ کے قوانین کو تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

آئی سی سی کے مطابق اس ترمیم کا اطلاق موسمِ گرما میں انگلینڈ اور آسٹریلیا کے مابین کھیلے جانے والے میچوں سے ہو گا۔

خیال رہے کہ انگلینڈ کے بالر سٹیو فِن بالنگ کرواتے وقت گزشتہ بارہ ماہ کے دوران باقاعدگی سے نان سٹرائیک اینڈ سے ٹکرا رہے ہیں۔

انگلش کاؤنٹی مڈل سیکس سے تعلق رکھنے والے سٹیو فِن کو گزشتہ برس اگست میں جنوبی افریقہ کےکپتان گراہم سمتھ کی وکٹ سے اس وقت محروم کر دیا گیا تھا جب وہ گیند کرواتے وقت نان سٹرائیک اینڈ سے ٹکرا گئے تھے اور امپائر نے اس گیند کو ’ڈیڈ بال‘ قرار دے دیا تھا۔

اس واقعہ کے بعد کرکٹ کے قوانین سے متعلق کمیٹی ایم سی سی کرکٹ قوانین کو تبدیل کرنے پر مجبور ہوئی۔

واضح رہے کہ تین مئی کو زمبابوے اور بنگلہ دیش کے درمیان ایک روزہ بین االاقوامی میچ نئے قانون کے تحت کھیلا جائے گا۔

اسی بارے میں