پاکستان کے لیے پہلا ملٹری سپورٹس ایوارڈ

Image caption کرنل آصف زمان پاکستان کے پہلے فوجی افسر ہیں جنہیں یہ ایوارڈ دیا گیا ہے

پاکستان کے کرنل آصف زمان کو ورلڈ ملٹری سپورٹس کونسل (سیزم) نے کھیلوں کی ترقی میں اہم کردار ادا کرنے پر ’گرینڈ نائٹ‘ کا ایوارڈ دیا ہے۔

وہ پاکستان کے ایسے پہلے فوجی افسر ہیں جنہیں یہ ایوارڈ دیا گیا ہے۔

یہ ایوارڈ انہیں ورلڈ ملٹری سپورٹس کونسل کے صدر کرنل حمّاد کلکابا نے جکارتا میں ہونے والی سیزم کی جنرل اسمبلی کے دوران دیا۔

کرنل آصف زمان اس وقت پاکستان سروسز سپورٹس کنٹرول بورڈ کے سکریٹری کی ذمہ داری نبھا رہے ہیں۔

وہ سکواش کے سابق برٹش اوپن چیمپئن قمر زمان کے چھوٹے بھائی ہیں اور خود بھی انٹرنیشنل سکواش میں پاکستان کی نمائندگی کرچکے ہیں۔

1983میں کوالالمپور میں پاکستان کی جس ٹیم نے ایشین جونیئر ٹائٹل جیتا تھا آصف زمان اس ٹیم میں شامل تھے۔

آصف زمان نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایوارڈ ان کے اور پاکستان کے لیے ایک بڑا اعزاز ہے۔

انہوں نے کہا کہ چونکہ وہ خود سپورٹس مین ہیں لہٰذا کھیلوں کا یہ شوق انہیں اپنی موجودہ ذمہ داریاں نبھانے میں مددگار ثابت ہوا ہے اور انہوں نے کئی کھیلوں کے ایونٹس منعقد کیے ہیں جن میں انٹرسروسز سپورٹس گالا قابل ذ کر ہے۔

انہوں نے بتایا کہ پاکستان میں ہر سال اٹھارہ فروری کو ورلڈ سیزم ڈے کے موقع پر میراتھن ریس ہوتی ہے۔

اس کے علاوہ حال ہی میں پاکستان کی انٹرسروسز کرکٹ ٹیم نے آسٹریلیا میں انٹرنیشنل ڈیفنس چیلنج کپ جیتا جس میں آٹھ ممالک شریک تھے۔ وہ اس ٹیم کے منیجر تھے۔

یاد رہے کہ پاکستان 1952 سے سیزم کا رکن ہے اور کئی ورلڈ ملٹری سپورٹس ایونٹس میں حصہ لے چکا ہے۔

اسی بارے میں