آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی کی تاریخ

Image caption آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی کے نام سے منعقد ہونے والا یہ آخری ٹورنامنٹ ہو گا

آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی کے سلسلے کا ساتواں ٹورنامنٹ 6 سے 23 جون تک انگلینڈ کھیلا جائے گا۔

جمعرات سے شروع ہونے والے اس ٹورنامنٹ میں آٹھ ٹیمیں حصہ لے رہں ہیں جنھیں دو گروپس میں تقسیم کیا گیا ہے۔

گروپ اے میں آسٹریلیا، انگلینڈ، نیوزی لینڈ اور سری لنکا جبکہ گروپ بی میں بھارت، پاکستان، جنوبی افریقہ اور ویسٹ انڈیز کی ٹیمیں شامل ہیں۔

آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی کے نام سے منعقد ہونے والا یہ آخری ٹورنامنٹ ہوگا۔

سنہ 2009، آسٹریلیا

جنوبی افریقہ میں 22 ستمبر سے لیکر 5 اکتوبر سنہ 2009 تک کھیلی جانے والے چھٹی آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی کا فائنل 5 اکتوبر سنہ 2009 کو ہوا۔

آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے درمیان ٹورنامنٹ کا فائنل سنچورین کے میدان میں کھیلا گیا۔

آسٹریلیا نے نیوزی لینڈ کو فائنل میں چھ وکٹوں سے شکست دے کر دوسری بار یہ ٹورنامنٹ جیتا۔

فائنل میں نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا اور مقررہ 50 اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 200 رنز بنائے۔

آسٹریلیا نے 4 وکٹوں کے نقصان پر مطلوبہ ہدف 45.5 اورز میں حاصل کر کے مسلسل دوسری بار یہ اعزاز اپنے نام کیا۔

آسٹریلیا کے شین واٹسن کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

سنہ 2006، آسٹریلیا

بھارت میں 7 اکتوبر سے 5 نومبر سنہ 2006 تک کھیلی جانی والی پانچویں آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی کا فائنل 5 نومبر سنہ 2006 کو ویسٹ انڈیز اور آسٹریلیا کے مابین ممبئی میں کھیلا گیا۔

آسٹریلیا نے فائنل میں ڈک ورتھ لوئس نظام کے تحت ویسٹ انڈیز کو 8 وکٹوں سے شکست دی کر پہلی بار یہ اعزاز حاصل کیا۔

فائنل میں ویسٹ انڈیز نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا اور اس کی پوری ٹیم 30.4 اوورز میں صرف 138 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی۔

اس میچ میں بارش کی وجہ سے آسٹریلیا کو 35 اوورز میں 116 رنز کا ہدف دیا گیا جو اس نے 28.1 اوورز میں حاصل کر لیا۔

آسٹریلیا کے شین واٹسن کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

سنہ 2004، ویسٹ انڈیز

انگلینڈ میں 10 سے 25 ستمبر سنہ 2004 کے دوران کھیلی جانے والے ٹورنامنٹ کا فائنل 25 ستمبر سنہ 2004 کو اوول کے میدان میں کھیلا گیا۔

ویسٹ انڈیز نے فائنل میں انگلینڈ کو 2 وکٹوں سے شکست دے کر چیمپئین ببنے کا اعزاز حاصل کیا۔

فائنل میں ویسٹ انڈیز نے ٹاس جیت کر انگلیڈ کو پہلے کھیلنے کی دعوت دی۔

انگلینڈ کی پوری ٹیم 49.4 اوورز میں 217 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔ ویسٹ انڈیز نے مطلوبہ ہدف 48.5 اوورز میں 8 وکٹوں کے نقصان پر پورا کر لیا۔

ویسٹ انڈیز کے ائین براڈ شاہ کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

سنہ 2002، بھارت اور سری لنکا

سری لنکا میں 12 سے 30 ستمبر سنہ 2002 کے دوران کھیلے جانے والے ٹورنامنٹ کا فائنل بھارت اور سری لنکا کے درمیان کھیلا جانا تھا۔

تاہم دو روز مسلسل بارش کی وجہ سے فائنل میچ منعقد نہیں ہو سکا جس کے بعد بھارت اور سری لنکا کو مشترکہ طور پر فاتح قرار دیا گیا۔

سنہ 2000، نیوزی لینڈ

کینیا میں 3 سے 15 اکتوبر سنہ 2000 تک کھیلے جانے والے ٹورنامنٹ کا فائنل 15 اکتوبر سنہ 2000 کو نیوزی لینڈ اور بھارت کے مابین کھیلا گیا۔

نیوزی لینڈ نے فائنل میں بھارت کو 4 وکٹوں سے شکست دے کر چیمپئین بننے کا اعزاز حاصل کیا۔

فائنل میں بھارت نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ 50 اوورز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 264 رنز بنائے۔

نیوزی لینڈ نے مطلوبہ ہدف 49.4 اوورز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر حاصل کر لیا۔

نیوزی لینڈ کے کرس کریز کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔ انھوں نے فائنل میں ناقابِل شکست 102 رنز بنائے۔

سنہ 1998، جنوبی افریقہ

بنگلہ دیش میں 24 اکتوبر سے یکم نومبر سنہ 1998 تک کھیلے جانے والے پہلے ٹورنامنٹ کا فائنل یکم نومبر سنہ 1998 کو جنوبی افریقہ اور ویسٹ انڈیز کے مابین کھیلا گیا۔

جنوبی افریقہ نے ویسٹ انڈیز کو فائنل میں 4 وکٹوں سے شکست دے کر یہ ٹورنامنٹ جیتا۔

جنوبی افریقہ نے فائنل میں ٹاس جیت کر ویسٹ اینڈیز کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی۔

ویسٹ انڈیز کی پوری ٹیم 49.3 اوورز میں 245 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

جنوبی افریقہ نے 6 وکٹوں کے نقصان پر مطلوبہ ہدف 47 ویں اوور میں حاصل کر لیا۔

جنوبی افریقہ کے یاک کیلس کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

اسی بارے میں