ایشز: انگلینڈ کی 261 رنز کی برتری

Image caption ایئن بیل اور سٹورٹ براڈ نے ساتویں وکٹ کے لیے اہم شراکت قائم کی ہے

ناٹنگھم میں کھیلے جا رہے ایشز سیریز کے پہلے ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن کھیل کے اختتام پر انگلینڈ کو آسٹریلیا پر دو سو اکسٹھ رنز کی برتری حاصل ہوگئی ہے اور دوسری اننگز میں اس کی 4 وکٹیں باقی ہیں۔

انگلینڈ نے آسٹریلیا کے خلاف دوسری اننگز میں تین سو چھبیس رنز بنائے ہیں اور جب جمعہ کو کھیل ختم ہوا تو اس وقت کریز پر این بیل 95 اور سٹورٹ براڈ 47 رنز بنا کر موجود تھے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

ان دونوں بلے بازوں کے درمیان ساتویں وکٹ کے لیے اب تک 108 رنز کی شراکت ہو چکی ہے۔

اس سے قبل جب تیسرے دن کا کھیل شروع ہوا تو انگلینڈ نے اپنی دوسری اننگز میں دو وکٹوں کے نقصان پر 80 رنز سے شروع کی۔ کریز پر موجود کیون پیٹرسن اور کپتان الیسٹر کک نے محتاط انداز میں بلے بازی کرتے ہوئے سکور 121 تک پہنچا دیا۔

اس موقع پر پیٹرسن کو جیمز پیٹنسن نے آؤٹ کر دیا۔ انہوں نے 64 رنز بنائے۔ کک بھی نصف سنچری مکمل کرتے ہی انیس سالہ آف سپنر ایشٹن اگر کی ٹیسٹ کرکٹ میں پہلی وکٹ بنے۔

آسٹریلیا کو دن کی تیسری اور مجموعی طور پر پانچویں کامیابی اس وقت ملی جب جونی بیرسٹو کو اگر نے ہی وکٹوں کے پیچھے کیچ کروا دیا۔

آؤٹ ہونے والے چھٹے انگلش بلے باز میتھیو پرائر تھے جنہیں سڈل نے 218 کے مجموعی سکور پر آؤٹ کر کے دوسری اننگز میں اپنی پہلی وکٹ لی۔

آسٹریلیا کی جانب سے دوسری اننگز میں مچل سٹارک اور ایشٹن اگر نے دو، دو جبکہ پیٹنسن اور پیٹر سڈل نے ایک ایک وکٹ حاصل کی ہے۔

بدھ کو شروع ہونے والے میچ میں انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور پہلی اننگز میں 215 رنز بنائے تھے جس کے جواب میں آسٹریلیا نے ایشٹن اگر اور فل ہیوز کی ریکارڈ شراکت کی بدولت اپنی پہلی اننگز میں 280 رنز بنائے تھے اور اسے انگلینڈ پر 65 رنز کی برتری حاصل ہوئی۔

آسٹریلیا کی جانب سے انیس سالہ ایشٹن اگر نے گیارہویں نمبر پر کھیلتے ہوئے اپنے پہلے ہی ٹیسٹ میچ میں 12 چوکوں اور 2 چھکوں کی مدد سے 98 رنز کی اننگز کھیلی جو کہ ایک ریکارڈ ہے۔

اسی بارے میں