آفریدی کی ٹیم میں شاندار واپسی، پاکستان کی فتح

Image caption شاہد آفریدی نے ایک روزہ کرکٹ میں اپنی 350 وکٹیں بھی مکمل کر لیں

گیانا میں پانچ ایک روزہ میچوں کی سیریز کے پہلے میچ میں پاکستان نے ویسٹ انڈیز کو 126 رنز سے شکست دے دی ہے۔

پاکستانی ٹیم کی فتح میں اہم کردار شاہد آفریدی کی آل راؤنڈ کارکردگی نے ادا کیا جنہوں نے پہلے نصف سنچری بنائی اور پھر سات وکٹیں بھی حاصل کیں۔

اتوار کو کھیلے گئے میچ میں ویسٹ انڈیز نے ٹاس جیت کر پاکستان کو پہلے بیٹنگ کرنے کی دعوت دی تھی اور پاکستان نے مقررہ پچاس اوورز میں نو وکٹوں کے نقصان پر 224 رنز بنائے۔

اس کے جواب میں ویسٹ انڈیز کی ٹیم صرف 98 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی جو ایک روزہ کرکٹ میں پاکستان کے خلاف اس کا سب سے کم سکور ہے۔

پاکستان کی بیٹنگ لائن اس میچ میں ایک بار پھر لڑکھڑا گئی اور 47 رنز پر اس کے پانچ کھلاڑی آؤٹ ہوگئے تھے۔

اس کے بعد کپتان مصباح الحق اور شاہدی آفریدی نے بیٹنگ لائن کو سنبھالا اور سکور کو 167 تک پہنچا دیا۔ ان دونوں کے درمیان ایک سو بیس رنز کی شراکت ہوئی۔

آفریدی نے 55 گیندوں پر 76 رنز بنائے جبکہ مصباح الحق نے اپنے باون رنز کی تکمیل کے لیے 121 گیندوں کا سامنا کیا۔

جواب میں ویسٹ انڈیز کا آغاز بھی اچھا نہ تھا اور محمد عرفان نے پہلے ہی اوور کی دوسری گیند پر جانسن چارلس کو آؤٹ کر کے پاکستان کو پہلی کامیابی دلوائی۔

عرفان نے ہی پانچویں اوور میں براوو کو آؤٹ کر کے دوسری وکٹ حاصل کی جبکہ ویسٹ انڈیز کی تیسری وکٹ 7 کے مجموعی سکور پر اس وقت گری جب مصباح الحق نے کرس گیل کو رن آؤٹ کر دیا۔

تہرے نقصان کے بعد ویسٹ انڈین بلے بازوں نے محتاط انداز اپنایا تاہم جب 23ویں اوور میں ویسٹ انڈیز کا سکور 41 رنز پر پہنچا تو شاہد آفریدی نے پہلے سمنز اور پھر کپتان ڈوین براوو کو یکے بعد دیگرے آؤٹ کر دیا۔

آفریدی نے ہی ویسٹ انڈیز کی باقی ساری وکٹیں بھی حاصل کی اور اس دوران ایک روزہ کرکٹ میں اپنی ساڑھے تین سو وکٹیں بھی مکمل کیں۔ وہ یہ کارنامہ سرانجام دینے والے تیسرے پاکستانی بولر ہیں۔

انہوں نے نو اوور میں بارہ رنز دے کر 7 وکٹیں حاصل کیں اور ایک روزہ کرکٹ کی تاریخ میں دوسری اور کسی پاکستانی بولر کی بہترین بولنگ کارکردگی ہے۔ انہیں اس آل راؤنڈ کارکردگی پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

پاکستانی ٹیم ویسٹ انڈیز کے دورے کے دوران پانچ ون ڈے اور دو ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل کھیلے گی

پاکستان کی ٹیم: ناصر جمشید، احمد شہزاد، محمد حفیظ، مصباح الحق، اسد شفیق، عمر اکمل، شاہد آفریدی، وہاب ریاض، اسد علی، سعید اجمل اور محمد عرفان شامل ہیں۔

ویسٹ انڈیز کی ٹیم: گیل، چارلس، براؤ، سائمنز، سیموئیل، ڈی جے براؤ، پولارڈ، سیمی، روچ، نارائن اور ہولڈر شامل ہیں۔

اسی بارے میں