لارڈز ٹیسٹ میں آسٹریلیا کو 347 رنز سے شکست

Image caption انگلینڈ کی جیت میں گریم سوان نے اہم کردار ادا کیا۔ انھوں نے میچ میں 9 وکٹیں حاصل کیں

انگلینڈ نے آسٹریلیا کو لارڈز میں کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ میچ میں 347 رنز سے شکست دے پانچ میچوں پر مشتمل سیریر میں دو صفر کی برتری حاصل کر لی۔

آسٹریلیا کی ٹیم 582 رنز کے ہدف کے تعاقب میں دوسری اننگز میں 235 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

پہلی اننگز کی طرح دوسری اننگز میں بھی آسٹریلیا کا آغاز اچھا نہ تھا اور صرف 36 رنز کے مجموعی سکور پر اس کے ابتدائی تین بلے باز آؤٹ ہو گئے۔

آسٹریلیا کی جانب سے دوسری اننگز میں کپتان مائیکل کلارک اور عثمان خواجہ نے چوتھی وکٹ کے لیے 98 رنز کی شراکت قائم کی تاہم اس کے بعد آسٹریلیا کی وکٹیں وقفے وقفے سے گرتی رہیں۔

آسٹریلیا کی جانب سے دوسری اننگز میں مائیکل کلارک نے 51 جبکہ عثمان خواجہ نے 54 رنز بنائے۔

ان دونوں بلے بازوں کے علاوہ آسٹریلیا کے دوسرے کھلاڑی وکٹ پر ٹھہر نہ سکے۔

انگلینڈ کی جیت میں گریم سوان نے اہم کردار ادا کیا۔ انھوں نے میچ میں 9 وکٹیں حاصل کیں۔

سوان نے دوسری اننگز میں آسٹریلیا کے 4 جبکہ پہلی اننگز میں 5 آسٹریلوی کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی۔

تیسرے دن کھیل کے اختتام پر انگلینڈ نے دوسری اننگز میں 5 وکٹوں کے نقصان پر 333 رنز بنائے تھے جبکہ چوتھے دن انگلینڈ نے 7 وکٹوں کے نقصان پر 349 رنز بنا کر اننگ ڈکلیئر کر دی تھی۔

انگلینڈ کی دوسری اننگز کی خاص بات جو روٹ کی شاندار سنچری تھی، انھوں نے 18 چوکوں اور 2 چھکوں کی مدد سے 180 رنز بنائے۔

آسٹریلیا کی جانب سے دوسری اننگز میں پیٹر سڈل نے تین جبکہ جیمز پیٹنسن اور سٹیون سمتھ نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

میچ کے دوسرے دن انگلینڈ نے اپنی پہلی اننگز میں 361 رنز بنائے تھے جس کے جواب میں آسٹریلیا کی پوری ٹیم پہلی اننگز میں صرف 128 رنز بنا کر ڈھیر ہو گئی تھی اور انگلینڈ کو آسٹریلیا کے خلاف 233 رنز کی برتری حاصل ہوئی تھی۔

پانچ ٹیسٹ میچوں پر مشتمل سیریز میں انگلینڈ کو آسٹریلیا کے خلاف دو صفر کی برتری حاصل ہو گئی ہے۔

ناٹنگھم میں کھیلے جانے والے پہلے ایشز ٹیسٹ میں انگلینڈ نے آسٹریلیا کو 14 رنز سے شکست دی تھی۔

اسی بارے میں